Results 1 to 2 of 2

Thread: شمع مزار تھی نہ کوئی سوگوار تھا

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default شمع مزار تھی نہ کوئی سوگوار تھا

    شمع مزار تھی نہ کوئی سوگوار تھا
    تم جس پہ رو رہے تھے یہ کس کا مزار تھا
    تڑپوں گا عمر بھر دل مرحوم کے لئے
    کمبخت نامراد، لڑکپن کا یار تھا
    سودائے عشق اور ہے، وحشت کچھ اور شے
    مجنوں کا کوئی دوست فسانہ نگار تھا
    جادو ہے یا طلسم تمہاری زبان میں
    تم جھوٹ کہہ رہے تھے مجھے اعتبار تھا
    کیا کیا ہمارے سجدے کی رسوائیاں ہوئیں
    نقش قدم کسی کا سر رہ گزار تھا
    اس وقت تک تو وضع میں آیا نہیں ہے فرق
    تیرا کرم شریک جو پروردگار تھا
    (بیخود دہلوی)

    1 - شمع مزار تھی نہ کوئی سوگوار تھا

  2. #2
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default

    Very Nice
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •