Results 1 to 2 of 2

Thread: اب پھول چنیں گے کیا چمن سے

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default اب پھول چنیں گے کیا چمن سے

    اب پھول چنیں گے کیا چمن سے
    تو مجھ سے خفا، میں اپنے من سے
    وہ وقت کہ پہلی بار دل نے
    دیکھا تھا تجھے بڑی لگن سے
    جب چاند کی اشرفی گری تھی
    اک رات کی طشتری میں چھن سے
    چہرے پہ مرے جو روشنی تھی
    تھی تیری نگاہ کی کرن سے
    خوشبو مجھے آرہی تھی تیری
    اپنے ہی لباس اور تن سے
    رہتے تھے ہم ایک دوسرے میں
    سرشار سے اور مگن مگن سے
    یہ زندگی اب گزر رہی ہے
    کن زرد اداسیوں کے بن سے
    کیا عشق تھا، جس کے قصے اب تک
    دہراتے ہیں لوگ اک جلن سے
    (ثمینہ راجا)
    1 - اب پھول چنیں گے کیا چمن سے

  2. #2
    Join Date
    Sep 2015
    Location
    London
    Age
    28
    Posts
    11
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    0

    Default

    Thanks for this ghazal

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •