Results 1 to 2 of 2

Thread: جب بہار آئی تو صحرا کی طرف چل نکلا

  1. #1
    Join Date
    Mar 2015
    Location
    Karachi
    Posts
    726
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    59 Thread(s)
    Thanked
    1
    Rep Power
    3

    Default جب بہار آئی تو صحرا کی طرف چل نکلا

    جب بہار آئی تو صحرا کی طرف چل نکلا
    صحنِ گل چھوڑ گیا، دل مرا پاگل نکلا
    جب اُسے ڈھونڈنے نکلے تو نشاں تک نہ ملا
    دل میں موجود رہا، آنکھ سے اوجھل نکلا
    اک ملاقات تھی جو دل کو سدا یاد رہی
    ہم جسے عمر سمجھتے تھے، وہ اک پل نکلا
    وہ جو افسانۂ غم سن کے ہنسا کرتے تھے
    اتنے روئے ہیں کہ سب آنکھ کا کاجل نکلا
    ہم سکون ڈھونڈنے نکلے تھے پریشان رہے
    شہر تو شہر ہے، جنگل بھی نہ جنگل نکلا
    کون ایوب پریشان نہیں تاریکی میں
    چاند افلاک پہ، دل سینے میں بے کل نکلا
    (ایوب رومانی)

    jab2Bbahar2Baaee2Bto2B17 12 13 - جب بہار آئی تو صحرا کی طرف چل نکلا

  2. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,928
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Thanked
    24
    Rep Power
    21474855

    Default

    Wahhh

    Sent from my SM-G360H using Tapatalk


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •