.

ہاں ترے ذکر پہ اک کاٹ سی اُٹھتی ہے ابھی
ہاں ابھی دل ترے بحران میں رکھا ہُوا ہے
.