تو بھی سخن شناس تھا۔۔درد آشنا نہ تھا
تو نے بھی شعر سن کے فقط واہ واہ کی