Results 1 to 9 of 9

Thread: ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

  1. #1
    Join Date
    Oct 2015
    Location
    pakistan
    Posts
    167
    Thanked
    4
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    11 Thread(s)
    Rep Power
    2

    candel ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

    امید وہم کے محور سے ہٹ کے دیکھتے ہیں
    ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

    بکھر چکے ہیں بہت باغ و دشت و دریا میں
    اب اپنے حجرۂ جاں میں سمٹ کے دیکھتے ہیں

    تمام خانۂ بدوشوں میں مشترک ہے یہ بات
    سب اپنے اپنے گھروں کو پلٹ کے دیکھتے ہیں

    پھر اس کے بعد جو ہونا ہے ہو رہے سردست
    بساط عافیت جاں الٹ کے دیکھتے ہیں

    وہی ہے خواب جسے مل کے سب نے دیکھا تھا
    اب اپنے اپنے قبیلوں میں بٹ کے دیکھتے ہیں

    سُنا یہ ہے کہ سبک ہو چلی ہے قیمت حرف
    سو ہم بھی اب قد و قامت میں گھٹ کے دیکھتے ہیں
    photo - ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

  2. The Following 2 Users Say Thank You to Summaya For This Useful Post:


  3. #2
    Join Date
    Dec 2009
    Location
    SAb Kya Dil Mein
    Posts
    11,926
    Thanked
    4
    Mentioned
    79 Post(s)
    Tagged
    2306 Thread(s)
    Rep Power
    21474855

    Default

    zabrdast


  4. #3
    Join Date
    Mar 2016
    Location
    Jeddah, Saudi Arabia
    Posts
    33
    Thanked
    8
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    11 Thread(s)
    Rep Power
    0

    Default

    سومایا


    Sent from my iPhone 6s Plus using Tapatalk

  5. #4
    Join Date
    Jun 2016
    Location
    US
    Posts
    20
    Thanked
    2
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Rep Power
    0

    Default

    بہت عمدہ

    Sent from my XT1080 using Tapatalk

  6. #5
    Join Date
    Sep 2013
    Location
    Karachi, Pakistan
    Posts
    6,363
    Thanked
    50
    Mentioned
    225 Post(s)
    Tagged
    5374 Thread(s)
    Rep Power
    874039

    Default

    bohat khoob.... lutf aaya paRh kar... keep posting.
    Quote Originally Posted by Summaya View Post
    امید وہم کے محور سے ہٹ کے دیکھتے ہیں
    ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

    بکھر چکے ہیں بہت باغ و دشت و دریا میں
    اب اپنے حجرۂ جاں میں سمٹ کے دیکھتے ہیں

    تمام خانۂ بدوشوں میں مشترک ہے یہ بات
    سب اپنے اپنے گھروں کو پلٹ کے دیکھتے ہیں

    پھر اس کے بعد جو ہونا ہے ہو رہے سردست
    بساط عافیت جاں الٹ کے دیکھتے ہیں

    وہی ہے خواب جسے مل کے سب نے دیکھا تھا
    اب اپنے اپنے قبیلوں میں بٹ کے دیکھتے ہیں

    سُنا یہ ہے کہ سبک ہو چلی ہے قیمت حرف
    سو ہم بھی اب قد و قامت میں گھٹ کے دیکھتے ہیں
    SetLifeOnFire - ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

  7. #6
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    HEART
    Posts
    5,555
    Thanked
    8
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    94 Thread(s)
    Rep Power
    21474851

    Default

    Bohat khoob ... Achi sharing
    1317513431 - ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں
    tumblr me123pYHCm1roa7ojo1 500 - ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

  8. #7
    Join Date
    Feb 2010
    Location
    dubai
    Posts
    2,483
    Thanked
    125
    Mentioned
    55 Post(s)
    Tagged
    7940 Thread(s)
    Rep Power
    214759

    Default

    superbbbbbbbbbb
    30abdx0 - ذرا سی دیر کو دنیا سے کٹ کے دیکھتے ہیں

  9. #8
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi, Pakistan, Pakistan
    Posts
    124,701
    Thanked
    532
    Mentioned
    411 Post(s)
    Tagged
    9089 Thread(s)
    Rep Power
    21474970

    Default

    nice sharing
    "Zindagi khuwab main khhonay lagi hai"

  10. #9
    Join Date
    Dec 2015
    Location
    united kingdom
    Posts
    73
    Thanked
    2
    Mentioned
    5 Post(s)
    Tagged
    54 Thread(s)
    Rep Power
    0

    Default

    awesome

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •