کبھی ہو سکے تو وقت نکال..
میری کچھ باتوں کا تو جواب دے..
میرے یار مجھ سے روٹھ گۓ..
تم بھی مجھ سے بچھڑ گۓ..
کیوں میری چاہتیں بیکار گئیں..
کبھی ہو سکے تو اے دلربا..
میری ان باتوں کا تو جواب دے.!