Results 1 to 2 of 2

Thread: فاصلوں کو تکلف ہے ہم سے اگر

  1. #1
    Join Date
    May 2018
    Location
    ?
    Age
    71
    Posts
    606
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    159
    Rep Power
    1

    Default فاصلوں کو تکلف ہے ہم سے اگر


    فاصلوں کو تکلف ہے ہم سے اگر ، ہم بھی بے بس نہیں ، بے سہارا نہیں
    خود اُنھی کو پُکاریں گے ہم دُور سے ، راستے میں اگر پاؤں تھک جائیں گے

    ہم مدینے میں تنہا نکل جائیں گے اور گلیوں میں قصدا بھٹک جائیں گے
    ہم وہاں جا کے واپس نہیں آئیں گے ، ڈھونڈتے ڈھونڈتے لوگ تھک جائیں گے

    جیسے ہی سبز گنبد نظر آئے گا ، بندگی کا قرینہ بدل جائے گا
    سر جُھکانے کی فُرصت ملے گی کِسے ، خُود ہی پلکوں سے سجدے ٹپک جائیں گے

    نامِ آقا جہاں بھی لیا جائے گا ، ذکر اُن کا جہاں بھی کیا جائے گا
    نُور ہی نُور سینوں میں بھر جائے گا ، ساری محفل میں جلوے لپک جائیں گے

    اے مدینے کے زائر خُدا کے لیے ، داستانِ سفر مُجھ کو یوں مت سُنا
    بات بڑھ جائے گی ، دل تڑپ جائے گا ، میرے محتاط آنسُو چھلک جائیں گے

    اُن کی چشمِ کرم کو ہے اس کی خبر ، کس مُسافر کو ہے کتنا شوقِ سفر
    ہم کو اقبال جب بھی اجازت ملی ، ہم بھی آقا کے دربار تک جائیں گے

  2. The Following User Says Thank You to _Master_ For This Useful Post:


  3. #2
    Join Date
    Feb 2010
    Location
    dubai
    Posts
    9,966
    Mentioned
    638 Post(s)
    Tagged
    8193 Thread(s)
    Thanked
    2029
    Rep Power
    214767

    Default

    jazak Allah khair bht khoobsurat naat hai keep sharing

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •