Results 1 to 2 of 2

Thread: اپنی محبتوں کی خدائی دیا نہ کر

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    16,705
    Mentioned
    1402 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5497
    Rep Power
    22

    New5555 اپنی محبتوں کی خدائی دیا نہ کر

    اپنی محبتوں کی خدائی دیا نہ کر
    ہر بے طلب کے ہاتھ کمائی دیا نہ کر

    دیتی ہے جب ذرا سی بھی آہٹ اذیتیں
    ایسی خموشیوں میں سنائی دیا نہ کر

    پہلے ہی حادثات کے امکان کم نہیں
    یوں مجھ کو راستوں میں سجھائی دیا نہ کر

    نظریں پتھروں کو بھی کر جائیں پاش پاش
    سج دھج کے بستیوں میں دکھائی دیا نہ کر

    ان موسموں میں پنچھی پلٹتے نہیں سدا
    دل کو اداسیوں میں رہائی دیا نہ کر

    آتا نہیں بدلنا جو انداز دشمنی
    چہرے بدل بدل کے دکھائی دیا نہ کر

    فرحت کوئی تو فرق ہو عام اور خاص میں
    ہر ایک آشنا کو رسائی دیا نہ کر
    ***


    2gvsho3 - اپنی محبتوں کی خدائی دیا نہ کر

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    16,705
    Mentioned
    1402 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5497
    Rep Power
    22

    Default Re: اپنی محبتوں کی خدائی دیا نہ کر

    2gvsho3 - اپنی محبتوں کی خدائی دیا نہ کر

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •