Results 1 to 2 of 2

Thread: نہ حریفِ جاں نہ شریکِ غم شبِ انتظار کوئی تو ہو

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    9,777
    Mentioned
    556 Post(s)
    Tagged
    19 Thread(s)
    Thanked
    3472
    Rep Power
    14

    New5555 نہ حریفِ جاں نہ شریکِ غم شبِ انتظار کوئی تو ہو

    نہ حریفِ جاں نہ شریکِ غم شبِ انتظار کوئی تو ہو
    کسے بزمِ شوق میں لائیں ہم دلِ بے قرار کوئی تو ہو
    کسے زندگی ہے عزیز اب کسے آرزوئے شبِ طرب
    مگر اے نگارِ وفا طلب ترا اعتبار کوئی تو ہو
    کہیں تارِ دامنِ گل ملے تو یہ مان لیں کہ چمن کھلے
    کہ نشان فصلِ بہار کا سرِ شاخسار کوئی تو ہو
    یہ اداس اداس سے بام و در، یہ اجاڑ اجاڑ سی رہگزر
    چلو ہم نہیں نہ سہی مگر سرِ کوئے یار کوئی تو ہو
    یہ سکونِ جاں کی گھڑی ڈھلے تو چراغِ دل ہی نہ بجھ چلے
    وہ بلا سے ہو غمِ عشق یا غمِ روزگار کوئی تو ہو
    سرِ مقتلِ شب آرزو، رہے کچھ تو عشق کی آبرو
    جو نہیں عدو تَو فرازؔؔ تُو کہ نصیب دار کوئی تو ہو
    ٭٭٭

    2gvsho3 - نہ حریفِ جاں نہ شریکِ غم شبِ انتظار کوئی تو ہو

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    9,777
    Mentioned
    556 Post(s)
    Tagged
    19 Thread(s)
    Thanked
    3472
    Rep Power
    14

    Default Re: نہ حریفِ جاں نہ شریکِ غم شبِ انتظار کوئی تو ہو

    2gvsho3 - نہ حریفِ جاں نہ شریکِ غم شبِ انتظار کوئی تو ہو

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •