Results 1 to 2 of 2

Thread: ذرا سی دیر کو آئے تھے خواب آنکھوں میں

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    19,578
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214773

    New5555 ذرا سی دیر کو آئے تھے خواب آنکھوں میں

    ذرا سی دیر کو آئے تھے خواب آنکھوں میں
    پھر اس کے بعد مسلسل عذاب آنکھوں میں

    وہ جس کے نام کی نسبت سے روشن تھا وجود
    کھٹک رہا ہے وہی آفتاب آنکھوں میں

    جنھیں متاع ِ دل و جان سمجھ رہے تھے ہم
    وہ آئیے بھی ہوئے بے حجاب آنکھوں میں

    عجب طرح کا ہے موسم کہ خاک اڑتی ہے
    وہ دن بھی تھے کہ کھلے تھے گلاب آنکھوں میں

    مرے غزال تری وحشتوں کی خیر کہ ہے
    بہت دنوں سے بہت اضطراب آنکھوں میں

    نہ جانے کیسی قیامت کا پیش خیمہ ہے
    یہ الجھنیں تری بے انتساب آنکھوں میں

    جواز کیا ہے مرے کم سخن بتا تو سہی
    بنام خوش نگہی ہر جواب آنکھوں میں
    ٭٭٭


    2gvsho3 - ذرا سی دیر کو آئے تھے خواب آنکھوں میں

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    19,578
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214773

    Default Re: ذرا سی دیر کو آئے تھے خواب آنکھوں میں

    2gvsho3 - ذرا سی دیر کو آئے تھے خواب آنکھوں میں

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •