Results 1 to 2 of 2

Thread: شہرِ گل کے خس و خاشاک سے خو ف آتا ہے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    14,000
    Mentioned
    1067 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    4506
    Rep Power
    19

    New5555 شہرِ گل کے خس و خاشاک سے خو ف آتا ہے


    شہرِ گل کے خس و خاشاک سے خو ف آتا ہے
    جس کا وارث ہوں اُسی خاک سے خوف آتا ہے

    شکل بننے نہیں پا تی کہ بگڑ جا تی ہے
    نئی مٹی کو ابھی چا ک سے خوف آتا ہے

    وقت نے ایسے گھمائے افق آفاق کہ بس
    محورِ گردشِ سفّا ک سے خوف آتا ہے

    یہی لہجہ تھا کہ معیار سخن ٹھہرا تھا
    اب اسی لہجۂ بے باک سے خوف آتا ہے

    آگ جب آگ سے ملتی ہے تو لو دیتی ہے
    خاک کو خاک کی پو شاک سے خوف آتا ہے

    قامتِ جاں کو خوش آیا تھا کبھی خلعتِ عشق
    اب اسی جامۂ صد چاک سے خوف آتا ہے

    کبھی افلاک سے نا لوں کے جواب آتے تھے
    ان دنوں عالمِ افلاک سے خوف آتا ہے

    رحمتِ سیدِؐ لولاک پہ کامل ایمان
    امتِ سیدِؐ لولاک سے خوف آتا ہے
    ٭٭٭

    2gvsho3 - شہرِ گل کے خس و خاشاک سے خو ف آتا ہے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    14,000
    Mentioned
    1067 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    4506
    Rep Power
    19

    Default Re: شہرِ گل کے خس و خاشاک سے خو ف آتا ہے

    2gvsho3 - شہرِ گل کے خس و خاشاک سے خو ف آتا ہے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •