Results 1 to 2 of 2

Thread: اک نظارہ ہو ں آنسو سے گہر ہو نے تک

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    17,846
    Mentioned
    1534 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5776
    Rep Power
    214771

    New5555 اک نظارہ ہو ں آنسو سے گہر ہو نے تک


    اک نظارہ ہو ں آنسو سے گہر ہو نے تک
    اک تماشا ہو ں میں شعلے سے شرر ہو نے تک

    تو ہے وہ رنگ کہ آنکھو ں سے نہ اوجھل ہو گا
    میں ہو ں وہ خواب کہ گز رو ں گا سحر ہو نے تک

    لکھتے ہیں پر یہ نہیں جانتے لکھنے والے
    نغمہ اندو ہ سماعت ہے اثر ہو نے تک

    تو کہیں بھی رہے زندہ ہے لہو میں میر ے
    میں سنواروں گا تجھے خاک بسر ہونے تک

    ہائے وہ شمع جو اب دور کہیں جلتی ہے
    میرے پہلو میں بھی پگھلی ہے سحر ہو نے تک




    2gvsho3 - اک نظارہ ہو ں آنسو سے گہر ہو نے تک

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    17,846
    Mentioned
    1534 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5776
    Rep Power
    214771

    Default Re: اک نظارہ ہو ں آنسو سے گہر ہو نے تک

    2gvsho3 - اک نظارہ ہو ں آنسو سے گہر ہو نے تک

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •