Results 1 to 2 of 2

Thread: حکایتِ سعدیؒ , تکبر

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    14,821
    Mentioned
    1116 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    4741
    Rep Power
    20

    candel حکایتِ سعدیؒ , تکبر

    حکایتِ سعدیؒ , تکبر
    23638 30717952 - حکایتِ سعدیؒ , تکبر

    ایک حاجت مند فقیر مدد کے لیے کسی مالدار کے پاس گیا اس نے بجائے کچھ دینے کے فقیر کو ڈانٹ دیا۔ فقیر نے خونِ جگر پیتے ہوئے آسمان کی طرف سر اٹھایا اور کہا! شاید اس نے اس قدر سختی اس لیے کی ہے کہ یہ کبھی حاجت مند ہو ہی نہیں سکتا۔ مالدار کو یہ بات سن کر مزید غصہ آیا اور غلام کو حکم دیا کہ اس کو دھکے مار مار کر باہر نکال دو۔ خدا کا کرنا ایسا ہو اکہ یہ مالدار بالکل کنگال ہو گیا۔ نہ مال رہا اور نہ غلام۔ بھوک نے اس کے سر پہ فاقے کی گرد جما دی اور ہاتھ اور جیب خالی ہو گئی۔ زمانہ گزرا کہ وہ غلام جس نے فقیر کو دھکے دے کر نکالا تھا کسی مالدار کے پاس گیا جو بہت ہی سخی تھا۔ وہ پریشان مسکین کو دیکھ کر ایسے خوش ہوا جیسے مسکین مال کو دیکھ کر خوش ہوتا ہے۔ اس مالدار نے اپنے غلام کو حکم دیا کہ اس سائل کو خوش کردے۔ دستر خوان بچھ گیا اور کھانے کے لیے سائل کو ساتھ بٹھا لیا گیا کہ اس نے زور سے نعرہ لگایا، رخساروں پہ آنسو ٹپکے اور دوڑ کر پہلے مالک کے پاس آیا۔ اس نے پوچھا! کیا ماجرا ہے، تو غلام نے بتایا کہ میں آج ایک سخی مالدار کے پاس گیا ہوں یقینا وہی ہے جس کو تیرے حکم سے میں نے دھکے مار مار کر نکالا تھا۔ اللہ تعالیٰ حکمتاً اگر ایک دروازہ بند کرتا ہے تو اپنے فضل و کرم کا دوسرا دروازہ کھول دیتا ہے۔ اس حکایت سے سبق ملتا ہے کہ تکبر اور طیش میں آ کر کسی سے بدسلوکی نہیں کرنی چاہیے۔ وقت کبھی ایک سا نہیں رہتا۔ دولت کا کچھ پتا نہیں، آج ہے اور کل نہیں۔ جس جائیداد پر انسان ناز کرتا ہے وہ کسی بھی لمحے چھن سکتی ہے۔ برابر یا اونچے رتبے والوں سے تو تقریباً ہر ایک ادب اور سلوک کا مظاہرہ کرتا ہے لیکن اصل اہمیت اپنے سے نچلے، کمزور اور حاجت مند سے کیے جانے والے سلوک کو حاصل ہے۔ جو شخص کمزوروں اور حاجت مندوں پر رعب جماتا ہے، یا ان پر غصہ نکالتا ہے اسے اپنے انجام کو نظر میں رکھنا چاہیے۔ کہیں ایسا نہ ہو کہ وہ بھی حاجت مند بنا دیا جائے۔ یعنی فقیروں اور سائلوں کے ساتھ بدسلوکی کرنے والوں کو اس بات سے ڈرنا چاہیے کہ کل کو ہو سکتا ہے کہ خدائے قادر مطلق فقیر کو غنی کر دے اور مالدار کو فقیر بنادے۔
    2gvsho3 - حکایتِ سعدیؒ , تکبر

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    14,821
    Mentioned
    1116 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    4741
    Rep Power
    20

    Default Re: حکایتِ سعدیؒ , تکبر

    2gvsho3 - حکایتِ سعدیؒ , تکبر

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •