Results 1 to 2 of 2

Thread: اک جستجو سدا ہی سے ذہن بشر میں ہے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    17,330
    Mentioned
    1523 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5741
    Rep Power
    214771

    New5555 اک جستجو سدا ہی سے ذہن بشر میں ہے


    اک جستجو سدا ہی سے ذہن بشر میں ہے
    جب سے ملی زمین مسلسل سفر میں ہے

    ہر چند میرے ساتھ اداسی سفر میں ہے
    روشن چراغ شوق مگر چشم تر میں ہے

    ملاح کہہ رہا ہے کہ ساحل ہے بس قریب
    لیکن مجھے پتہ ہے کہ کشتی بھنور میں ہے

    تم سے کبھی جو بول نہ پایا میں ایک بات
    بن کر خلش وہ آج بھی میرے جگر میں ہے

    بربادیوں کی زد پہ فقط شاخ گل نہیں
    گلشن تمام نرغۂ برق و شرر میں ہے

    جب سے میں ان کے حلقۂ بیعت میں آ گیا
    نایابؔ ایک روشنی فکر و نظر میں ہے

    جہانگیر نایاب

    2gvsho3 - اک جستجو سدا ہی سے ذہن بشر میں ہے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    17,330
    Mentioned
    1523 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5741
    Rep Power
    214771

    Default Re: اک جستجو سدا ہی سے ذہن بشر میں ہے

    2gvsho3 - اک جستجو سدا ہی سے ذہن بشر میں ہے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •