Results 1 to 3 of 3

Thread: Main Kiya Banoon Ga

  1. #1
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Main Kiya Banoon Ga

    مجھے ایک ننھا بچہ نہ سمجھو
    مجھے اس قدر بھولا بھالا نہ سمجھو


    مجھے کھیلنے کا ہی شیدا نہ سمجھو
    سمجھتے ہو ایسا تو ایسا نہ سمجھو


    میں طاقت میں رستم سے بہتر بنوں گا
    بہادر بنوں گا دلاور بنوں گا


    میں پڑھ لکھ کے اوروں کا رہبر بنوں گا
    ارسطو بنوں گا ، سکندر بنوں گا


    سبق نیکیوں کے مجھے یاد ہونگے
    بہت سے ہنر مجھ سے ایجاد ہونگے


    بہت مجھ سے خوش میرے استاد ہونگے
    عزیز اور ماں باپ سب شاد ہونگے


    سچائی سے ہرگز نہ شرماؤں گا میں
    بھلائی ہر اک سے کئے جاؤں گا میں


    مصیبت میں ہرگز نہ گھبراؤں گا میں
    برائی کی راہوں سے کتراؤں گا میں


    نہ میں دل دکھانے کی باتیں کروں گا
    نہ ہرگز رلانے کی باتیں کروں گا


    میں بلکہ ہنسانے کی باتیں کروں گا
    دلوں کو ملانے کی باتیں کروں گا

    شاعر :حفیظ جالندھری
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi, Pakistan, Pakistan
    Posts
    125,914
    Mentioned
    839 Post(s)
    Tagged
    9270 Thread(s)
    Thanked
    1181
    Rep Power
    21474971

    Default Re: Main Kiya Banoon Ga

    صرف آواز نہیں ، لفظ بھی مقفل ہیں مرے

    سوچ میں ہوں کہ اب تجھ کو پکاروں کیسے

  3. #3
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Re: Main Kiya Banoon Ga

    Thanks
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •