Results 1 to 4 of 4

Thread: Dukh Kaise Marta Hai

  1. #1
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Dukh Kaise Marta Hai

    ایمرجنسی سے کارڈیالوجی وارڈ کی راہداری تک وہ ہمیشہ دکھ کی گرفت میں رہتا تھا مگر اس روز وہ اندر سے بلکل خالی تھا بینچ پر بھی وہ ارادہ کر کے نہیں یونہی بیٹھ گیا تھا اور اتنی دیر تک اونگھتا رہا کہ وقت کے تیزی سے گزرنے کا احساس پوری طرح معدوم ہو گیا وہ ٹھیک سے اندازہ نہ کر پایا کہ ایک اسٹریچر کے پوری تیزی سے دھکیلے جانے کے باعث اٹھنے والے شور نے اُسے کتنی دیر بعد بیدار کیا تھا اسٹریچر وارڈ نمبر تھری سے ہی لایا جارہا تھا اُسے غیر معمولی تجسس ہوا کہ وہ اسکا چہرہ دیکھے اس نے چہرہ دیکھا بھی مگر یہ اسکی ماں کا چہرہ ہنہیں تھا وہ الٹے قدموں چلتا بینچ پر ڈھے گیا شاید یہ وہ پہلا روز تھا جب نبیل نے اپنی ماں کی مشکل آسان ہونے کی دُعا کی تھی وہ دعائیں کرتا رہا حتی کے اسکے ہاں اثاثہ سمجھے جانے والے سارے مقدس لفظ معنوں سے خالی ہوگئے۔ ۔ ۔ یوں جیسے اُسے باثروت بنانے والے سارے کرنسی نوٹوں کے مار کے اڑ گئے ہوں زبان کی ڈھیری پر کیڑوں کی طرح کلبلانے اور رینگنے والے یہ لفظ ہونٹوں پر آ کر تیرنے لگتے اور اسی بے خبری میں تالو سے چپک کر بے سدھ ہو جاتے وہ دیکھ رہا تھا مگر مرنے والوں اور انکے ساتھ زندہ در گور رہنے والوں کے بیچ کوئی تمیز نہیں کر پارہا تھا لاشیں اسکے سامنے سے گزرتی تھیں وہ ان پر نظر ڈالتا یہ لاشیں اسے دکھ کے بجائے تسکین دینے لگی تھیں! تسکین نہیں اسکا سا احساس، ملتا جلتا اور الگ سا بھی۔ ۔ ۔ اور یہیں احساس شاید خود اسکے زندہ رہنے کی علامت تھا، وہ سوچ سکتا تھا کہ مرنے والوں کی نہیں بلکہ انتظار کھینچنے والوں کی مشکلیں آسان ہو رہی تھی ایسے میں اسے اپنے اندر سے تعفن اٹھتا ہوا محسوس ہوا اس نے اپنا سارا بدن ٹٹولنے کے لیے ادھیڑ ڈالا بہت اندر گھپ اندھیرے میں دو لاشیں پڑی تھی اُس نے صاف پہچان لیا ان میں سے ایک اسکی اپنی محبت تھی اور دوسری کو دیکھے بغیر منہ پھیر لیا اور پورے خلوص سے رونے کی سعی کی مگر تعفن کا ریلا اسے دکھ سے دور بہت دور بہائے لیے جاتا تھا۔
    Last edited by Mohammad Sajid; 14-08-2009 at 01:33 AM.
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi, Pakistan, Pakistan
    Posts
    125,914
    Mentioned
    839 Post(s)
    Tagged
    9270 Thread(s)
    Thanked
    1180
    Rep Power
    21474971

    Default re: Dukh Kaise Marta Hai

    Hmmm
    صرف آواز نہیں ، لفظ بھی مقفل ہیں مرے

    سوچ میں ہوں کہ اب تجھ کو پکاروں کیسے

  3. #3
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Islamabad, UK
    Posts
    88,507
    Mentioned
    1031 Post(s)
    Tagged
    9706 Thread(s)
    Thanked
    603
    Rep Power
    21474934

    Default re: Dukh Kaise Marta Hai



    nice one

  4. #4
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default re: Dukh Kaise Marta Hai

    Thanks
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •