Results 1 to 4 of 4

Thread: Tarsaaya Gaya Hoon

  1. #1
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Tarsaaya Gaya Hoon

    جہاں بستر کو ترسایا گیا ہوں
    وہیں لیٹا ہوا پایا گیا ہوں
    نہ لمبایا نہ چوڑایا گیا ہوں
    میں ایک ڈربے میں ڈربایا گیا ہوں
    بجائے ڈاکٹر کے آتی ہیں نرسیں
    کھلونے دے کے بہلایا گیا ہوں
    دوا دارو سے ہے پرہیز میرا
    فقط پانی پہ ٹرخا یا گیا ہوں
    میں ہاؤس جاب والوں کا ہدف ہوں
    ہر ایک کو پیش فرمایا گیا ہوں
    بدن کی ہڈی ہڈی چوں بہ چوں ہے
    میں پکے راگ میں گایا گیا ہوں
    فرشتہ موت کا کہتا ہے مجھ سے
    میں خود آیا نہیں لایا گیا ہوں
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi, Pakistan, Pakistan
    Posts
    125,914
    Mentioned
    839 Post(s)
    Tagged
    9270 Thread(s)
    Thanked
    1181
    Rep Power
    21474971

    Default Re: Tarsaaya Gaya Hoon

    صرف آواز نہیں ، لفظ بھی مقفل ہیں مرے

    سوچ میں ہوں کہ اب تجھ کو پکاروں کیسے

  3. #3
    Join Date
    Jul 2009
    Location
    Lahore
    Posts
    2,574
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    31 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474847

    Default Re: Tarsaaya Gaya Hoon

    umda


  4. #4
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Re: Tarsaaya Gaya Hoon

    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •