گھر میں ہمارے مہماں آئے خوب لگا ہی میلہ
ہر کوئی بیٹھا بڑھ بڑھ کھائے سیب ، ،پپیتا ، کیلا

بلّو کے گڈے کے براتی ایک سے ایک عجیب
کوئی تو بیٹھا ناک چڑھائے ، کوئی نکالے جِیب

تین ہیں لوگ ہمارے گھر ، حسو ، چھٹو ، گاندھی
دو نے لال غرارے پہنے ایک نے پگڑی باندھی

تین ہیں لڑکیاں دُبلی پتلی شکلوں سے پہچانو
حسو کی یہ بہنیں ہوں گی رفو ، دادو ، نالو

دو بلو کی دوست پرانی شہنازی اور پی چو
تینوں شہ سلطان کے بچے نیدو ، نگھو ، ککو

کاموں ، شارو ، نصرت ، منّی ، ساتھ میاں افرازی
رنگ برنگے کپڑے پہنے لے گئے سب سے بازی

ریحانہ کی انگلی پکڑے آ گئے بھائی زمان
سمدھی کا نکلے گا دوالہ ، سترہ ہیں مہمان

باجے کی آواز جو آئی اٹھ کر سارے بھاگے
پیچھے بلّو اور براتی ، گڈا آگے آگے

بلو بی بی ہم بھی چل کر کھا لیں مرغ پلاؤ
گھر پر چوکیدار رہے گا ہم کو چھوڑ نہ جاؤ

ابنِ انشاء