Results 1 to 7 of 7

Thread: Ghalib Aur Faarsi

  1. #1
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Ghalib Aur Faarsi

    غالب کو اپنے فارسی کلام پر اتنا ناز تھا کہ وہ اپنی اردو شاعری کو اس کے مقابلے میں روکھی پھیکی اور بے رنگ سمجھتے تھے۔
    فارسی بیں تا ببینی نقشہائے رنگ رنگ
    بگزر از مجموعہء اردو کہ بے رنگِ من است
    اگر میرے رنگا رنگ مضامین سے لطف اندوز ہونا ہے تو میرا فارسی کلام
    پڑھو۔ اردو کو چھوڑو، یہ تو میرا بے رنگ کلام ہے۔
    وقت کی ستم ظریفی دیکھیے کہ آج پاک و ہند میں اور ہر اس ملک میں جہاں جنوبی ایشیا کے لوگ آباد ہیں غالب کا ڈنکا بج رہا ہے لیکن محض اس کے اُردو کلام کی بدولت۔
    مغلیہ سلطنت کے زوال کے بعد سرکاری سطح پر فارسی کی جگہ آہستہ آہستہ انگریزی قابض ہو گئی اور آج سے پچاس برس پہلے تک پاکستان میں فارسی کو جو علمی اور ادبی مقام حاصل تھا اب اسکا بھی خاتمہ ہو چکا ہے۔
    فارسی کو بطور ایک مضمون پڑھنے والوں کی تعداد روز بروز کم ہوتی چلی گئی ہے اور آج اگر کسی محفل میں حافظ یا سعدی کا شعر سنایا جائےتو لوگ منہ تکنے لگتے ہیں۔
    اسی لیے محتاط لوگ فارسی کا کوئی حوالہ دینے سے گریز کرتے ہیں اور اگر شدید ضرورت آن پڑے تو ساتھ ہی اسکی تشریح ضرور کر دیتے ہیں۔
    آج سے کوئی تیس پینتیس برس پہلے صوفی غلام مصطفٰے تبسم نے پاکستان کے پڑھے لکھے طبقے کو غالب کے فارسی کلام سے روشناس کرانے کا بیڑا اُٹھایا تو کاروباری سطح پر کوئی ناشر شرحِ غالب چھاپنے کے لئے تیار نہ تھا۔ آخر پیکجز لمٹیڈ نے اس نیک کام میں ہاتھ بٹایا اور غالب کے فارسی کلام کی شرح دو جِلدوں میں تیار ہو کر منظرِ عام پر آگئی۔
    یہ کتاب اب ناپید ہے اور ناشر نے اسکی طباعتِ ثانی کو بھی ضروری نہیں سمجھا۔ پھر یہ بھی ہے کہ صوفی صاحب کی شرح صِرف ایسے لوگوں کے کام آ سکتی تھی جو فارسی زبان کی مبادیات سے واقف ہوں۔
    کئی مقامات پر صوفی صاحب نے مشکل الفاظ کی تشریح یہ سوچ کر نظر انداز کر دی تھی کہ یہ تو سب کو معلوم ہی ہو گا۔ اس صورتِ حال میں غالب کے فارسی کلام کی ایک ایسی شرح ضروری تھی جس تک عام آدمی کی پہنچ ہو اور ہر قابلیت کے لوگ جس سے استفادہ کر سکیں۔
    غالب کے مدّاحوں کی خوش نصیبی ہے کہ خواجہ حمید یزدانی کی شرحِ کُلیاتِ غالب (فارسی) نے اس ضرورت کو بطریقِ احسن پورا کر دیا ہے۔
    کتاب کی ابتداء غالب کی اُس غزل سے ہوتی ہے جو اپنے پنجابی روپ میں گلوکار غلام علی کی بدولت زبان زدِ خاص و عام ہو چکی ہے۔ عوامی دلچسپی کی خاطر اس غزل کے ہر شعر کا اردو اور پنجابی ترجمہ ساتھ ساتھ دیا گیا ہے۔ محض نمونے کی خاطر غزل کا مطلع یہاں درج کیا جا رہا ہے۔
    زمن گرت نہ بود باور انتظار بیا
    بہانہ جُوئے مباش و ستیزہ کار بیا
    دکھا نہ اتنا خدا را تُو انتظار آجا
    نہ ہو ملاپ تو لڑنے کو ایک بار آجا
    میرے شوق دا نئیں اعتبار تینوں، آجا ویکھ میرا انتظار آ جا
    اینویں لڑن بہانڑے لبھنا ایں، کِیہ توں سوچنا ایں ستم گار آجا
    اس سہ لسانی غزل کے مقابل غالب کی ایک بہت کم یاب پورٹریٹ بھی چھپی ہوئی ہے جو انھوں نے عالمِ جوانی میں بنوائی تھی۔
    کتاب کا باقاعدہ آغاز ردیف وار غزلوں سے ہوتا ہے۔ ہر شعر کی تشریح سے قبل مشکل الفاظ کے معانی درج کیے گئے ہیں۔ ایک لفظ کے اگر دو تین معانی مستعمل ہیں تو فرہنگ میں وہ سب دے دیے گئے ہیں البتہ شعر کا ترجمہ کرتے ہوئے صرف وہ مطلب بیان کیا گیا ہے جو وہاں مراد ہے۔
    ہر شعر کا مطلب آسان زبان میں بیان کرنے کی کوشش کی گئی ہے اور جہاں تلمیحات وغیرہ استعمال ہوئی ہیں وہاں تاریخی پس منظر بھی درج کر دیا گیا ہے۔ تو لیجئیے ہم اس کتاب کو آنکھیں بند کر کے کہیں سے بھی کھول لیتے ہیں......
    ردیف ن ہمارے سامنے ہے:
    تاز دیوانم کہ سرمستِ سخن خواہد شدن
    ایں مے از قحطِ خریداری کہن خواہد شدن
    کوکبم را در عدم اوجِ قبولی بودہ است
    شہرتِ شعرم بگیتی بعدِمن خواہد شدن
    ترجمہ:
    میری شاعری کو پڑھ کر اگر لوگ سر مست نہ ہوئے تو خریداروں کی کمی کے باعث یہ شراب پُرانی ہو جائے گی ( اور وقیع تر صورت اختیار کر لے گی)
    میری قسمت کے ستارے کو عدم میں بڑا بلند مقام حاصل ہے چنانچہ میری شاعری کی شہرت بھی میری موت کے بعد اُس وقت ہو گی جب میں عدم میں ہوں گا۔
    اور یہ حقیقت ہے کہ گزشتہ ایک صدی کے دوران غالب کی شاعری کا جس قدر چرچا ہوا وہ دنیا میں معدودے چند شاعروں کا حصہ ہے

  2. #2
    Join Date
    May 2010
    Location
    Islamabad
    Posts
    3,022
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    31 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474847

    Default Re: Ghalib Aur Faarsi

    ghalib ki kia baat hey......... nice sharing

  3. #3
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    Karachi,Pakistan
    Posts
    11,803
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    16 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474855

    Default Re: Ghalib Aur Faarsi

    nice sharring......
    Alhamdullilah

  4. #4
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Jatoi
    Posts
    59,925
    Mentioned
    201 Post(s)
    Tagged
    9827 Thread(s)
    Thanked
    6
    Rep Power
    21474903

    Default Re: Ghalib Aur Faarsi

    Bohhat aalaa Sharingg janabbb





    تیری انگلیاں میرے جسم میںیونہی لمس بن کے گڑی رہیں
    کف کوزه گر میری مان لےمجھے چاک سے نہ اتارنا

  5. #5
    Join Date
    May 2010
    Location
    Hyderabad
    Age
    30
    Posts
    43
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    0

    Default Re: Ghalib Aur Faarsi

    bhot umda sharing .. shukria

  6. #6
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    ♥ ♥ ChaAnd K paAr♥ ♥
    Posts
    41,780
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1314 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474887

    Default Re: Ghalib Aur Faarsi

    /up

    *~*~*~*ღ*~*~*~**~*~*~*ღ*~*~*~*

    2m4ccw6 - Ghalib Aur Faarsi

    *~*~*~*ღ*~*~*~**~*~*~*ღ*~*~*~*

  7. #7
    Join Date
    Mar 2010
    Location
    *In The Stars*
    Posts
    18,093
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1271 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474862

    Default Re: Ghalib Aur Faarsi

    nice sharing




    Yahi Dastoor-E-ulfat Hai,Nammi Ankhon,
    Mein Le Kar Bhi,

    Sabhi Se Kehna Parta Hai,K Mera Haal,
    Behter Hai...!!


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •