Results 1 to 2 of 2

Thread: Aam Aadmi

  1. #1
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    ♥ ♥ ChaAnd K paAr♥ ♥
    Posts
    41,780
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1314 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474887

    Default Aam Aadmi

    ابے او عام آدمی کیوں صبح صبح چیخ رہے ہو آرام سے بات نہیں کر سکتے کیا؟
    میں چیخ نہیں رہا جناب، آج ایک ماہ بعد آپ سے ملنے آیا، اسی لئے پوچھ رہا ہوں کہ آپ بجلی کا بل کیسے دیتے ہیں اگر دیتے ہیں تو گھر کا خرچہ کیسے چلاتے ہیں؟
    میرا گزارہ ہو جاتا ہے میں تمھاری طرح عام آدمی نہیں ہوں۔
    آلو کس بھاؤ خریدتے ہیں؟ پھر وہی عام انسانوں جیسی چھوٹی بات، آلو بھی خرید لیتے ہیں۔
    گھر کا خرچہ؟
    تمہیں صبح صبح کیا ہو گیا ہے؟ انسان اتنے دنوں بعد ملتا ہے تو ایک دوسرے کا حال احوال پوچھتا ہے، اپنی خیریت سے آگاہ کرتا ہے، ملکی حالات پر بات کرتا ہے، تم نے آتے ہی عام آدمی جیسے سوالات شروع کر دئیے۔
    کیا کروں جناب، نہ حال احوال کا ہوش ہے، نہ ملک سے دلچسپی بس پریشانی کھائے جا رہی کہ بجلی کا بل کیسے ادا کروں گا اگر وہ دے دوں تو گھر کی دال روٹی کا کیا ہو گا، روٹی کھائی تو بچوں کی فیس، ماہ رمضان ہے حکومت نے عام استعمال کی اشیاء کو سستا کرنے کا اعلان کیا ہے مگر بازار جاؤ تو ٹماٹر، آلو، گھی، چینی، آٹا غرض ہر چیز کے نرخ آسمان کو چھو رہے ہیں، سحری کریں تو افطاری کے لئے کچھ نہیں ہوتا، افطاری کر لیں تو سحری کے لئے کچھ نہیں بچتا، آگے عید آ رہی ہے بچوں کے کپڑے اور جوتے خریدنے ہیں پریشانی ہی پریشانی ہے، ایسے حالات میں کسی بات کا کہاں ہوش رہتا ہے۔
    تمہیں پتہ ہے الیکشن کمیشن نے صدارتی انتخاب کی تاریخ دے دی ہے اور خیر سے ہمارے صدر مشرف صاحب ایک بار پھر صدر بننے جا رہے ہیں۔
    میری بلا سے صدر مشرف بنے یا مولانا فضل الرحمٰن مجھے اس سے کیا فرق پڑے گا، کیا اس سے میری آمدنی میں اضافہ ہو جائے گا یا خوردنوش کی اشیاء سستی ہو جائیں گی؟
    ہٹ عام آدمی، جاہل، گنوار!!! تم نے آج کا اخبار پڑھا ہے؟
    نہیں، کیوں؟
    امریکہ افغانستان اور عراق میں مسلمانوں کا قتل عام کر رہا ہے؟
    تو کیا کروں؟
    مقابلہ کرو!!!
    ٹماٹر میں خرید نہیں سکتا امریکہ کا مقابلہ کیسے کروں۔
    دیکھ لینا ایک دن امریکہ تباہ ہو کر رہے گا۔
    اس سے میرا بجلی کا بل ادا ہو جائے گا یا معاف کر دیا جائے گا؟
    عام آدمی واقعی گھٹیا سوچ کے مالک ہوتے ہیں اور تم بھی ٹہرے ایک عام آدمی! میں تاریخ بدلنے کی بشارت دے رہا ہوں اور تم اپنی دال روٹی میں پڑے ہو، اپنے اندر ایک عظیم قوم والی خصوصیات پیدا کرو۔
    عظیم قوم میں کیا خصوصیات ہوتی ہیں؟
    ان کے اردے بلند اور کردار مضبوط ہوتے ہیں اور وہ دشمن کے آگے جھکنے سے انکار کر دیتی ہیں۔
    عظیم قوم روٹی بھی کھاتی ہیں؟
    وہ تو ہر کوئی کھاتا ہے۔
    عظیم قومیں وہی بنتی ہیں جو مسائل میں نہیں جھکڑی ہوتیں، میں بجلی کا بل ادا کرتا ہوں تو بچوں کی فیس نہیں بچتی، فیس دیتا ہوں تو گھر کی دال روٹی کی فکر کھائے جاتی ہے، میری کمر روز بروز بڑھتی مہنگائی نے جھکا دی ہے، آپ دشمن کے آگے نہ جھکنے کی بات کرتے ہیں، مجھ سے تو سیدھے کھڑا نہیں ہوا جاتا۔
    یہ سب تمھارے لیڈروں کا قصور ہے جو اس ملک کو لوٹ رہے ہیں۔
    جو لیٹرے ہیں انہیں پکڑا جائے میری جیب پر کیوں ڈاکہ ڈالا جا رہا ہے؟
    تم نے انہیں ووٹ جو دئیے تھے؟
    کہاں دئیے جناب! بس ایک بھٹو کو ووٹ دیا تھا اسے پھانسی پر چڑھا دیا گیا اس کے بعد ووٹ دینے سے توبہ کر لی، ساری عمر مہنگائی سے لڑتے گزری مجھے تو ووٹ کا ہوش ہی نہیں رہا، میرے فرشتوں کو بھی پتہ نہیں کہ لیٹرے کون ہیں اور کون نہیں؟
    تو اتنے وزرائے اعظم کہاں سے آئے، تمھارے جیسے دوسرے عام آدمیوں نے انہیں ووٹ دئیے ہوں گے؟
    اللہ جانے کہاں سے آئے کیونکہ بھٹو کے بعد تو اقتدار کا فیصلہ کبھی ووٹروں نے کیا ہی نہیں۔
    سب لیٹرے ہیں۔
    میں مان لیتا ہوں سب لیٹرے ہیں مگر مجھے سزا کیوں مل رہی ہے؟
    تمہیں کیا سزا مل رہی ہے؟
    کوئی ایک سزا ہو تو کہوں! میں اپنے آئینی حقوق لے نہیں سکتا کیونکہ رشوت دینے کی مجھ میں سکت نہیں ہے، میں کسی ناظم کی مدد نہیں مانگ سکتا کیونکہ وہ میرے ووٹ سے بنا ہی نہیں، میں لازمی اشیائے ضرورت کے روز بروز بڑھتے ہوئے نرخوں پر اجتجاج نہیں کر سکتا کیونکہ حکومت الیکشن میں مصروف ہے، سیاستدان مشرف فوفیا میں مبتلا ہیں وہ سپریم کورٹ کی نہیں مانتے مجھ غریب کی کیا سنیں گے۔ میرا بچہ قتل ہو جائے تو میں قاتلوں کا کچھ نہیں بگاڑ سکتا کیونکہ میرے پاس پولیس اور عدالت کا خرچ نہیں، میں بس میں کھڑے ہو کر سفر کرتا ہوں کیونکہ سیٹ چھین لینے کی مجھ میں طاقت نہیں، یہ سب کچھ میرے ساتھ ہو رہا ہے، جن لیڈروں کے جرائم آپ بتا رہے ہیں ان کا کیا بگڑا؟ سبھی آزادی سے اندرون و بیرون ملک مزے کر رہے ہیں اور میں آزاد ہوتے ہوئے بھی ایک قیدی کی زندگی گزار رہا ہوں، اؤ! ٹائم ہو گیا آج آخری تاریخ ہے مجھے بجلی کا بل ادا کرنا ہے، اگر آج ادا نہ ہوا تو میرے گھر کا بجلی کا میٹر کاٹ دیا جائے گا پھر واپڈا کے دھکے کھانے پڑیں گے میرے پاس تو کوئی سفارش بھی نہیں، اچھا اللہ حافظ پھر ملیں گے۔
    اللہ حافظ عام آدمی بشرط زندگی پھر ملاقات ہو گی۔
    Last edited by Arslan; 07-08-2012 at 11:49 PM.

    *~*~*~*ღ*~*~*~**~*~*~*ღ*~*~*~*

    2m4ccw6 - Aam Aadmi

    *~*~*~*ღ*~*~*~**~*~*~*ღ*~*~*~*

  2. #2
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Re: Aam Aadmi

    Thanks 4 Sharing
    پھر یوں ہوا کے درد مجھے راس آ گیا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •