Results 1 to 7 of 7

Thread: غصہ کیا ہے؟

  1. #1
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Canada
    Posts
    25,300
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    442 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    11381699

    candel غصہ کیا ہے؟

    Asalamu-Alekam WRWB
    اسکا جواب یہ ہے کہ غصہ اور جارحیت انسان کا ایک فطری جذبہ ہے جو اس وقت پیدا ہوتا ہے جب اسے کسی مقصد کے حصول میں رکاوٹ پیش آئے ہو یا اپنی خواہش اور رضا مندی سے وہ جو کچھ کرنا چاہے اور نہ کر سکے۔ غصہ

    چونکہ انسانی فطرت کا حصہ ہے اس لیے یہ ایک غیر اختیاری فعل ہے اس لیے غصے کا آجانا انسان کہ بس میں نہیں لیکن اس کو کنٹرول میں کرنا ضرور انسانی بس میں ہے ۔اب چونکہ یہ انسانی فطرت کا تقاضا ہے لہزا مطلقا کسی بھی ذات میں غصہ کا پایا جانا بُرا نہیں بلکہ بُرا یہ ہے کہ کوئی بھی شخص غصہ میں آجانے کہ بعد اس پر قابو نہ رکھ سکے اور بے جا غصہ کرنا شروع کردے اور اسطرح کرنا انتہائی قبیح فعل ہے۔ اور اسی طرح بالکل اس کہ برعکس وہ مقامات کہ جہاں ایک اور انسانی فطرت یعنی غیرت کا تقاضا ہو وہاں پر غصہ کیا جائے مگر کوئی انسان اگر وہاں پر غصہ نہ کرے تو یہ بھی ایک بیماری ہے ۔ غصہ اور غیرت دونوں انسانی فطرت کا حصہ ہیں لہذا جس طرح بے جا اور ہر وقت کا غصہ بجا نہیں بالکل اسی طرح بجا طور پر اور جائز غصہ اور غیرت کا اظہار نہ کرنا بھی صحت کی نہیں بلکہ بیماری کی علامت ہے البتہ غصہ اور غیرت کے اظہار میں اخلاقیات اور قانون کے دائرے کو ملحوظ خاطر رکھنا ضروری ہے۔ اب آتے ہیں اس سوال کی طرف کہ .....

    غصہ کیوں آتا ہے ؟

    تو اسکا جواب یہ ہے کہ چونکہ یہ انسانی فطرت کا حصہ ہے لہزا جب جب انسان ایسے حالات سے گزرتا ہے کہ جن کی وجہ سے انسانی فطرت غصہ کی طرف مائل ہو تو انسان کو غصہ آہی جاتا ہے بنیادی طور پر ہر انسان میں غصہ کا ایلیمنٹ جدا جدا ہے کسی کو بہت جلد غصہ آجاتا ہے اور کسی کو بدیر کسی جلد آتا ہے دیر سے جاتا ہے اور کسی کو دیر سے آتا ہے اور جلدی جاتا ہے غصہ کا تعلق جنس سے بھی ہے اسی لیے مردوں کو خواتین کی بنسبت زیادہ غصہ آتا ہے غصہ کا تعلق عمر سے بھی اسی لیے بوڑھوں کہ مقابلے میں نوجوانوں کو زیادہ غصہ آتا ہے ۔

    اور غصہ کا تعلق انسانی شعور سے بھی ہے اسی لیے آپ نے دیکھا ہوگا کہ ایک عام دیہاتی کہ مقابلے میں زیادہ پڑھے لکھے اور باشعور انسان کو غصہ کم آتا ہے ۔ ۔ ۔ اور ان سب کہ بعد غصہ کا سب سے زیادہ تعلق انسانی معاشرتی حالات پر ہے اور انسانی نفسیات سے بھی ہے معاشرتی حالات پر یوں کہ وہ لوگ جو جاگیرداری یا وڈیرہ شاہی کہ نظام کہ تابع اور محکوم ہوتے ہیں وہ جلد غصہ میں آجاتے ہیں ان لوگوں کہ مقابلے میں جو کہ متوسط یا امیر طبقے سے تعلق رکھتے ہیں اور نفسیات سے یوں کہ جب بھی انسان کوئی کام کرنا چاہے اور اور میں کوئی رکاوٹ واقع ہو تو انسان جھنجھلا اٹھتا ہے اور یہی جھنجھلاہٹ غصہ کا باعث بنتی ہے اسی طرح بعض اوقات غصہ عبارت ہوتا انسانی کامیابیوں اور ناکامیوں سے ایک ناکام آدمی کامیاب کہ مقابلے میں بہت جلد غصہ میں آجاتا ہے ۔۔ بالکل اسی طرح غصہ کا ایک بہت بڑا عنصر عبارت ہے روز مرہ کی انسانی زندگی کی تلخیوں سے کہ یہ تلخیاں کسی بھی انسان کہ اندر اتنی کڑواہٹ بھر دیتی ہیں کہ ایسا انسان چاہے وہ کسی بھی طبقے سے تعلق رکھتا ہو جلد غصہ میں آجاتا ہے اور ہمہ وقت غصہ میں رہتا ہے اس کہ علاوہ بھی غصہ کی متعدد وجوہات ہیں سردست فقط انہی پر اکتفا کرتا ہوں ....

    غصے کا علاج کیا ہے یا اس پر کسی کنٹرول کیا جائے ۔ ۔ ؟

    تو اس کا جواب یہ ہے کہ ہم چونکہ سب سے پہلے مسلمان ہیں لہزا اس سلسلے میں ہمارے لیے سب سے بڑھ کر تعلیمات وہی ہیں جو کہ ہمارے دین نے ہمیں سکھائی ہیں اور وہ تعلیمات ہمارے سامنے موجود ہیں ہمارے پیارے آقا صلی اللہ علیہ وسلم کہ پیارے پیارے اسوہ حسنہ کی صورت میں لہزا صرف اسی سے چند مثالیں ذکر کرکے اس موضوع کو ختم کروں گا ۔ ۔ ۔
    ام المومنین حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کا ارشاد گرامی ہے : آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے تمام زندگی اپنے اوپر کی گئی زیادتی کا بدلہ نہیں لیا، بجز اس کے کہ خدائی حرمت کو پامال کیا گیا ہو، پس اس صورت میں آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سختی سے مواخذہ فرماتے تھے۔
    (البخاری، جلد نمبر 3، صفحہ نمبر 395)

    اہل طائف نے حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے کیا سلوک کیا مگر 9ھ میں جب ان کا وفد مدینہ شریف پہنچا تو حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ان کو صحن مسجد میں مہمان ٹھہرایا اور ان سے عزت و حرمت سے پیش آئے۔

    رئیس المنافقین عبداللہ ابن ابی نے ہمیشہ درپردہ دشمنوں کی حمایت کی۔ وہ واقعہ افک میں براہ راست ملوث تھا۔ بقول علامہ شبلی نعمانی رحمۃ اللہ علیہ و علامہ سید سلیمان ندوی رحمۃ اللہ علیہ دشمنوں کی شماتت، ناموس کی بدنامی۔۔۔ یہ باتیں انسانی صبر و تحمل کے پیمانہ میں نہیں سماسکتیں۔ تاہم رحمت عالم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ان سب باتوں کے ساتھ کیا۔ (سیرت النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم، حصہ دوم، صفحہ نمبر 211)

    اس کے باوجود نہ صرف حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے عبداللہ بن ابی کو معاف کیا بلکہ مرنے کے بعد اسے اپنی قمیض پہنائی اور ستر سے زیادہ مرتبہ استغفار کرنے کا وعدہ فرمایا۔جس کا نتیجہ یہ ہوا کہ اس کہ قبیلے کہ ایک ہزار لوگ یہ منظر دیکھ کر اسلام لے آئے ۔ ۔
    آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا فرمان تھا : طاقتور وہ نہیں جو کسی دوسرے کو پچھاڑ دے بلکہ اصل طاقتور وہ ہے جو غصے کے وقت خود پر قابو رکھے۔
    (مسلم، حدیث نمبر 2014)

    ایک مرتبہ ایک شخص نے نصیحت سننے کی خواہش کی تو آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا : غصہ نہ کیا کر اور اسے تین مرتبہ دہرایا۔
    (البخاری، جلد4، صفحہ نمبر 139)

    ایک دفعہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ایک مسلمان قبیلے کے قحط دور کرنے کی خاطر ایک یہودی زید بن سعید سے اسّی دینار قرض لیا۔ چنانچہ اس سے قبیلے کو خوراک مہیا کردی گئی۔ ادائیگی کے وقت سے پہلے ہی زید، حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے پاس آیا اور گستاخانہ انداز میں رقم کی واپسی کا مطالبہ کیا۔ حضرت عمر رضی اللہ عنہ اس کی گستاخی کو برداشت نہ کرسکے اور حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے اس کا سر قلم کرنے کی اجازت چاہی، مگر آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا : اے عمررضی اللہ عنہ! تمہیں چاہئے تھا کہ مجھے حسن ادا کی تلقین کرتے اور اسے حسن طلب کی۔ پھر آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے نہ صرف اس کے قرض کی فوری واپسی کا حکم دیا بلکہ بیس صاع (تقریباً دو من) زیادہ کھجوریں دینے کا حکم دیا۔ اس سلوک سے وہ مسلمان ہوگیا۔
    (اردو دائرہ معارف اسلامیہ، جلد19، صفحہ نمبر 129)

    یہ تو تھے پاک نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی پاکیزہ کردار کہ چند عملی نمونے اس کہ علاوہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کہ کچھ قولی ارشادات بھی ایسے ہیں کہ جن کی روشنی میں انسان غصے پر قابو پایا جاسکتا ہے مثلا آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے غصے کا یہ حل تجویز فرمایا کہ جب کسی کو غصہ آئے تو وہ اگر کھڑا ہے تو بیٹھ جائے اور بیٹھا ہے تو لیٹ جائے۔ اسی طرح آپ نے غصے کی حالت میں وضو کر کے اسے ٹھنڈا کرنے کا حکم دیا ہے ۔ ۔
    اس کہ علاوہ علماء نے بھی غصہ پر قابو پانے کے لئے چند نسخے تجویز کئے ہیں۔
    ۱. اَعُوذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیطَانِ الرَّجِیمِ کہنا۔
    ۲. خدا کو یاد کرنا کہ توریت میں ارشادِ احدیت ہے، فرزند آدم جب تجھے غصّہ آئے تو مجھے یاد کرنا تاکہ میں اپنے غضب میں تجھے یاد رکھوں اور تجھے تباہ نہ کر دوں اور جب تجھ پر کوئی زیادتی ہو تو میرے انتقام کا انتظار کرنا کہ میرا انتقام تیرے انتقام سے بہر حال بہتر ہ
    ۔۳. اگر کھڑا ہے تو بیٹھ جائے اور بیٹھا ہو تو لیٹ جائے اور لیٹا ہو تو کھڑا ہو جائے۔
    ۴. جگہ بدل دے کہ شیطان نے جناب موسیٰ علیہ السلام سے گفتگو کرتے ہوئے یہ نصیحت کی کہ جب تمہیں غصہ آئے تو اپنی جگہ بدل دینا ورنہ میں مصیبت میں مبتلا کردوں گا۔
    روایات میں وارد ہوا ہے کہ جو شخص اپنے غصّہ کو روک لے گا، پروردگار روز قیامت اسے معاف کرے گا اور اس کے گناہوں کی پردہ پوشی کرے گا اور اسے جنت عطا فرمائے گا۔

  2. #2
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Karachi....
    Posts
    31,280
    Mentioned
    41 Post(s)
    Tagged
    6917 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474875

    Default Re: غصہ کیا ہے؟

    Walaikum Asalam

    jazakAllah khair
    MAshallah bhtt hi bht hi khoobsurat sharing ki hai

  3. #3
    Join Date
    Sep 2008
    Location
    Multan
    Age
    26
    Posts
    2,384
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474848

    Default Re: غصہ کیا ہے؟


  4. #4
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    ♥ ♥ ChaAnd K paAr♥ ♥
    Posts
    41,780
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1314 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474887

    Default Re: غصہ کیا ہے؟




  5. #5
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    ♥ ♥ ChaAnd K paAr♥ ♥
    Posts
    41,780
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1314 Thread(s)
    Thanked
    2
    Rep Power
    21474887

    Default Re: غصہ کیا ہے؟




  6. #6
    Join Date
    Jul 2010
    Location
    Wah cantt
    Age
    25
    Posts
    2,155
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    3 Thread(s)
    Thanked
    0
    Rep Power
    21474846

    Default Re: غصہ کیا ہے؟


  7. #7
    Join Date
    Mar 2008
    Location
    Hijr
    Posts
    152,763
    Mentioned
    104 Post(s)
    Tagged
    8577 Thread(s)
    Thanked
    80
    Rep Power
    21474998

    Default Re: غصہ کیا ہے؟

    Jazak ALLAH Khair

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •