Results 1 to 2 of 2

Thread: کچھ اس ادا سے میرے یار سر کشیدہ ہوئے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,202
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    Default کچھ اس ادا سے میرے یار سر کشیدہ ہوئے


    کچھ اس ادا سے میرے یار سر کشیدہ ہوئے
    کہ فتح پا کے بھی قاتل علم دریدہ ہوئے

    عجیب طور سے ڈوبا ہے ڈوبنے والا
    کہ ساحلوں کے بگولے بھی آبدیدہ ہوئے

    جو اپنے سائے کی قامت سے خوف کھاتےہیں
    ہمارے بعد وہی لوگ برگزیدہ ہوئے

    میں چپ رہا تو اٹھیں+مجھ پہ انگلیاں کیا کیا
    زباں ملی تو مرے حرف ناشنیدہ ہوئے

    ہماری لاش سے گزرے تو بے خبر گزرے
    وہ جن کے نام پہ ہم لوگ سربریدہ ہوئے

    جنھیں غرور تھا اپنی ستمگری پہ بہت
    ستم تو یہ ہے کہ وہ بھی ستم رسیدہ ہوئے

    عصائے حق ہے میسر نہ تختِ دل محسن
    ہم ایسے لوگ بھی کس سن میں سن رسیدہ ہوئے​
    2gvsho3 - کچھ اس ادا سے میرے یار سر کشیدہ ہوئے

  2. #2
    Join Date
    Feb 2010
    Location
    dubai
    Posts
    11,835
    Mentioned
    6413 Post(s)
    Tagged
    11727 Thread(s)
    Thanked
    3026
    Rep Power
    214771

    Default Re: کچھ اس ادا سے میرے یار سر کشیدہ ہوئے

    Wah wah wah .......... SubhanAllah
    superbbbbbbbbbb


    30abdx0 - کچھ اس ادا سے میرے یار سر کشیدہ ہوئے
    mera siggy koun uraa le gaya....

  3. The Following User Says Thank You to maya For This Useful Post:


Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •