Results 1 to 3 of 3

Thread: وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    22,552
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5874
    Rep Power
    214777

    Default وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا


    وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا
    ہوئی ہے رات وہ بارش ، گماں نہ تھا جس کا

    ہوائیں خود اسے ساحل پہ لا کے چھوڑ گئیں
    وہ ایک ناؤ کوئی بادباں نہ تھا جس کا

    اسی کے دم سے تھی رونق تمام بستی میں
    کہ خندہ لب تھا مگر غم عیاں نہ تھا جس کا

    جلی تو یوں کہ ہوئے راکھ راکھ جسم و جاں
    عجیب آگ تھی کوئی دھواں نہ تھا جس کا

    گلی گلی میں خموشی پہن کے پھرتا تھا
    کوئی تو تھا کہ کہیں ہم زباں نہ تھا جس کا
    ٭٭٭


    2gvsho3 - وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا

  2. #2
    Join Date
    Feb 2010
    Location
    dubai
    Posts
    11,835
    Mentioned
    7562 Post(s)
    Tagged
    11727 Thread(s)
    Thanked
    3026
    Rep Power
    214771

    Default Re: وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا

    awesome Share karne ka bht shukriya ..


    30abdx0 - وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا
    mera siggy koun uraa le gaya....

  3. #3
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    22,552
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5874
    Rep Power
    214777

    Default Re: وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا

    رائے کا شکریہ
    2gvsho3 - وہ زخم پھر سے ہرا ہے نشاں نہ تھا جس کا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •