پائی پائی امانت سمجھ کر عوام پر خر چ کررہے ہیں : عثمان بزدار
aa.jpg
ماضی کی طرح مخصوص شہروں کیلئے وسائل مختص نہیں کئے جائینگے ، ہرعلاقے کویکساں ترقی دیں گے بھارت کاپاکستان پر الزام لگانا انتہائی شرمناک،وزیراعلیٰ ،سوائن فلو سے بچاؤ کیلئے حفاظتی تدابیرکی ہدایت

لاہور (سپیشل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ نئے پاکستان میں پائی پائی امانت سمجھ کر دیانت کے ساتھ عوام پر خر چ کررہے ہیں۔ترقی وخوشحالی کے سفر کو پسماندہ علاقوں تک لے کرجائیں گے ۔ماضی کی طرح مخصوص شہروں کیلئے وسائل مختص نہیں کیے جائیں گے بلکہ نئے پاکستان میں ہرعلاقے کویکساں ترقی دیں گے ۔سابق دور میں ترقیاتی منصوبوں کے نام پرقومی وسائل کا بے دریغ ضیاع کیا گیا۔پلوامہ حملے پر بھارتی پراپیگنڈے کے بعد وزیراعظم عمران خان کا جرأٔت مندانہ پالیسی بیان قوم کے جذبات کی حقیقی ترجمانی کرتا ہے ۔بھارت کا تحقیقات اور ثبوتوں کے بغیر پاکستان پر الزام لگانا انتہائی شرمناک ہے ۔ وہ اراکین قومی و صوبائی اسمبلی سے گفتگو کر رہے تھے ۔ انہو ں نے کہا کہ حکومت عوام سے کیے گئے وعدے نبھائے گی ۔انہوں نے کہا کہ عوام کی فلاح وبہبود کے لئے ٹھوس اقدامات کر رہے ہیں۔ عوام کی بے لوث خدمت ہمارا مشن ہے ،اسے ہر قیمت پرپورا کریں گے ۔ فلاح عامہ کے منصوبوں کیلئے عوامی نمائندگان کی تجاویز اورسفارشات کو اہمیت دیں گے کیونکہ ارکان اسمبلی ہی میرے آنکھ اورکان ہیں ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ملک و قوم کی بہتری کیلئے کئے گئے فیصلوں کے مثبت اثرات سامنے آنا شروع ہو گئے ہیں۔ فلاح عامہ کے انقلابی پروگرام پر عملدرآمد کرتے ہوئے اہداف حاصل کریں گے ۔ انہو ں نے کہا کہ پاکستان پر بھارتی الزام تراشی بلاجواز ہے اور بھارتی حکومت اپنی سیاسی ناکامیوں کا ملبہ پاکستان پر ڈالنے کی ناکام کوشش کر رہی ہے ۔ پاکستان کی طرف سے امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے ۔ پاکستان کی پوری قوم متحد اور یکسو ہے اورہماری بہادر افواج پاک سر زمین کے دفاع کیلئے ہمہ وقت تیار ہیں۔مزید برآں وزیراعلیٰ نے سوائن فلو سے بچاؤ کیلئے ہرممکن حفاظتی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایت کی ہے ۔وزیر اعلیٰ نے ہدایت کی ہے کہ سوائن فلو سے شہریوں کو محفوظ رکھنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جائیں،وزیراعلیٰ نے بہاولپور میں سوائن فلو سے خاتون کے جاں بحق ہونے کے حوالے سے رپورٹ طلب کر لی ۔ دریں اثنا وزیر اعلیٰ نے مادری زبان کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ زبان نہ صرف جذبات کے اظہار و خیال کا ذریعہ ہے بلکہ اقوام کی شناخت بھی زبان سے ہی ہوتی ہے ،دریں اثنا ئوزیراعلیٰ نے امیر گلستان جنجوعہ کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے