عقاب کو اپنے شکار تک پہنچنے کیلئے قدرت نے ’’خاصیت ‘‘ سے نوازا
a.jpg
شکار عقاب کی خاص خصوصیت ہے اور وہ شکار کر کے اپنی خوراک کا بندوبست کرتا ہے ،

لاہور (نیٹ نیوز) تاہم چٹیل میدانوں میں اسے اپنا شکار تلاش کرنے میں تھوڑی مشکل پیش آسکتی ہے تاہم قدرت نے اس پرندے کو ایک اور خاصیت سے نوازا ہے ، عقاب پرواز کرتے ہوئے بنفشی روشنی کی شعاعوں کو دیکھنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔اس کے باعث وہ زمین کھودنے اور میدانوں میں رہنے والے جانوروں کا پیشاب دیکھ لیتا ہے اور اس کی سیدھ میں چلتے ہوئے سیدھا جانور کے بل میں پہنچتا ہے تاہم دوسرے جانور بھی خطرے کو بھانپنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور شکاری کی آہٹ پا کر زیر زمین روپوش ہوجاتے ہیں۔ ایسے میں عقاب کو مردہ جانور کی لاشوں پر اکتفا کرنا پڑتا ہے ،عقابوں کی پریشانی اس وقت اور بھی بڑھ جاتی ہے جب طوفان کا وقت ہو، اس وقت ان کے پر گیلے ہوجاتے ہیں جن کے سوکھنے تک وہ اڑ نہیں سکتے ۔ماہرین کا کہناہے کہ عقاب کوپالنے والے شوقین افراد کو بہت احتیاط کی ضرورت ہوتی ہے کیونکہ فطرتاً یہ ایک شکار ی پرندہ ہے اور شکارکرنا اس کی فطرت ہے اور فطرتی طورپراس کی کوئی حرکت بھی انسان کیلئے خطرناک ہوسکتی ہے جس سے وہ شدید زخمی ہوسکتاہے ۔