آنکھوں میں حلقے پڑ گئے ،پیروں میں چھالے پڑ گئے
یہ عاشقی اچھی رہی جاں کے بھی لالے پڑ گئے