محبت تھی چمن سے ، لیکن اب یہ بیدماغی ہے
کہ موجِ بوئے گل سے ، ناک میں آتا ہے ، دم میرا