Results 1 to 2 of 2

Thread: یہ نام ممکن نہیں رہے گا،مقام ممکن نہیں رہے گا

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5878
    Rep Power
    214781

    New5555 یہ نام ممکن نہیں رہے گا،مقام ممکن نہیں رہے گا


    یہ نام ممکن نہیں رہے گا،مقام ممکن نہیں رہے گا

    غرور لہجے میں آ گیا تو کلام ممکن نہیں رہے گا

    یہ برف موسم جو شہرِ جاں میں کُچھ اور لمحے ٹھہر گیا تو

    لہو کا دل کی کسی گلی میں قیام ممکن نہیں رہے گا

    تم اپنی سانسوں سے میری سانسیں الگ تو کرنے لگے ہو لیکن

    جو کام آساں سمجھ رہے ہو وہ کام ممکن نہیں رہے گا

    وفا کا کاغذ تو بھیگ جائے گا بدگُمانی کی بارشوں میں

    خطوں کی باتیں تو خواب ہوں گی پیام ممکن نہیں رہے گا

    میں جانتی ہوں مجھے یقیں ہے اگر کبھی تُو مجھے بھُلا دے

    تو تیری آنکھوں میں روشنی کا قیام ممکن نہیں رہے گا

    یہ ہم محبّت میں لا تعلّق سے ہو رہے ہیں تو دیکھ لینا

    دُعائیں تو خیر کون دے گا سلام ممکن نہیں رہے گا

    2gvsho3 - یہ نام ممکن نہیں رہے گا،مقام ممکن نہیں رہے گا

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5878
    Rep Power
    214781

    Default Re: یہ نام ممکن نہیں رہے گا،مقام ممکن نہیں رہے گا

    2gvsho3 - یہ نام ممکن نہیں رہے گا،مقام ممکن نہیں رہے گا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •