Results 1 to 2 of 2

Thread: شب کے تیرہ سمندر نے کھولا ہے در دن نکلتا نہیں

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 شب کے تیرہ سمندر نے کھولا ہے در دن نکلتا نہیں

    شب کے تیرہ سمندر نے کھولا ہے در دن نکلتا نہیں
    ڈوبتا جا رہا ہے نگر کا نگر دن نکلتا نہیں

    رو رہی ہے سحر آنکھ کے اس طرف رات کی قید میں
    اور پریشان گم سم کھڑے ہیں شجر دن نکلتا نہیں

    بزدلی کے سبب اتنی مہنگی پڑی رات سے دشمنی
    بس گیا ہے اندھیروں سے اک ایک گھر دن نکلتا نہیں

    کون وحشت کے ماتھے پہ چاندی لگانے کی جرات کرے
    کون دل سے نکالے مقدر کا ڈر دن نکلتا نہیں

    ایک خلقت کھڑی ہے تہہ سنگ احساس سود و زیاں
    وا کیے ایک مدت سے آنکھوں کے در دن نکلتا نہیں

    ***



    2gvsho3 - شب کے تیرہ سمندر نے کھولا ہے در دن نکلتا نہیں

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: شب کے تیرہ سمندر نے کھولا ہے در دن نکلتا نہیں

    2gvsho3 - شب کے تیرہ سمندر نے کھولا ہے در دن نکلتا نہیں

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •