Results 1 to 2 of 2

Thread: جو کچھ دیکھا جو سوچا ہے وہی تحریر کر جائیں

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,202
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    New5555 جو کچھ دیکھا جو سوچا ہے وہی تحریر کر جائیں

    جو کچھ دیکھا جو سوچا ہے وہی تحریر کر جائیں!
    جو کاغذ اپنے حصے کا ہے وہ کاغذ تو بھر جائیں!
    نشے میں نیند کے تارے بھی اک دوجے پر گرتے ہیں
    تھکن رستوں کی کہتی ہے چلو اب اپنے گھر جائیں
    کچھ ایسی بے حسی کی دھند سی پھیلی ہے آنکھوں میں
    ہماری صورتیں دیکھیں تو آئینے بھی ڈر جائیں
    نہ ہمت ہے غنیمِ وقت سے آنکھیں ملانے کی
    نہ دل میں حوصلہ اتنا کہ مٹی میں اتر جائیں
    گُلِ امید کی صورت ترے باغوں میں رہتے ہیں
    کوئی موسم ہمیں بھی دے کہ اپنی بات کر جائیں
    دیارِ دشت میں ریگِ رواں جن کو بناتی ہے
    بتا اے منزلِ ہستی کہ وہ رستے کدھر جائیں
    تو کیا اے قاسمِ اشیاء یہی آنکھوں کی قسمت ہے
    اگر خوابوں سے خالی ہوں تو پچھتاووں سے بھر جائیں

    جو بخشش میں ملے امجدؔ تو اس خوشبو سے بہتر ہے
    کہ اس بے فیض گلشن سے بندھی مُٹھی گزر جائیں
    ۔۔۔۔۔۔۔۔


    2gvsho3 - جو کچھ دیکھا جو سوچا ہے وہی تحریر کر جائیں

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,202
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    Default Re: جو کچھ دیکھا جو سوچا ہے وہی تحریر کر جائیں

    2gvsho3 - جو کچھ دیکھا جو سوچا ہے وہی تحریر کر جائیں

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •