Results 1 to 2 of 2

Thread: ہیں سبھی سے جن کی گہری یاریاں

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 ہیں سبھی سے جن کی گہری یاریاں


    ہیں سبھی سے جن کی گہری یاریاں
    سُن میاں ہوتی ہیں ان کی خواریاں

    ہے خوشی عیاروں کا اک ثمر
    غم کی بھی اپنی ہیں کچھ عیاریاں

    ذرّے ذرّے پر نہ جانے کس لیے
    ہر نفس ہیں کہکشائیں طاریاں

    اس نے دل دھاگے ہیں ڈالے پاؤں میں
    یہ تو زنجیریں ہیں بےحد بھاریاں

    تم کو ہے آداب کا برص و جزام
    ہیں ہماری اور ہی بیماریاں

    خواب ہائے جاودانی پر مرے
    چل رہی ہیں روشنی کی آریاں

    ہیں یہ سندھی اور مہاجر ہڈ حرام
    کیوں نہیں یہ بیچتے ترکاریاں

    یار! سوچو تو عجب سی بات ہے
    اُس کے پہلو میں مری قلقاریاں

    ختم ہے بس جونؔ پر اُردو غزل
    اس نے کی ہیں خون کی گل کاریاں


    2gvsho3 - ہیں سبھی سے جن کی گہری یاریاں

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: ہیں سبھی سے جن کی گہری یاریاں

    2gvsho3 - ہیں سبھی سے جن کی گہری یاریاں

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •