Results 1 to 2 of 2

Thread: جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

    جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت
    یک دست جہاں مجھ سے پھرا ہے ، مگر انگشت
    کافی ہے نشانی، ترا چھلّے کا نہ دینا
    خالی مجھے دکھلا کے ، بوقت سفر، انگشت
    خوں دل میں جو میر ے نہیں باقی، تو پھر اس کی
    جوں ماہی بے آب، تڑپتی ہے ہر انگشت
    افسوس! کہ دنداں کا کیا رزق فلک نے
    جن لوگوں کی تھی، درخورِ عقدِ گہر، انگشت
    لکھتا ہوں ، اسد! سوزشِ دل سے سخنِ گرم
    تا رکھ نہ سکے کوئی، مرے حرف پر، انگشت
    2gvsho3 - جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

    2gvsho3 - جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •