Results 1 to 2 of 2

Thread: اِک سرابِ سیمیا میں رہ گئے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 اِک سرابِ سیمیا میں رہ گئے


    اِک سرابِ سیمیا میں رہ گئے
    لوگ جو بِیم و رجا میں رہ گئے
    کِس شبِ نغمہ کی ہیں یہ یادگار!
    چند نوحے جو ہَوا میں رہ گئے
    پی لئے کچھ اشک پاسِ عشق نے
    کچھ فشارِ التجا میں رہ گئے
    کھو گئے کچھ حرف دشتِ ضبط میں
    کچھ غبارِ مدعا میں رہ گئے
    چند جستوں کا یہ سارا کھیل ہے
    رہ گئے، جو ابتدا میں، رہ گئے
    سبز سایہ دار پیڑوں کی طرح
    رفتگاں، دشتِ وفا میں رہ گئے
    حاصلِ عمرِ رواں، وہ وقت، جو
    ہم تری آب و ہَوا میں رہ گئے
    ہے لہو کا قافلہ اَب تک رواں
    اور قاتل، کربلا میں رہ گئے

    ہم ہیں امجدؔ اُن حقائق کی طرح
    جو بیانِ واقعہ میں رہ گئے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


    2gvsho3 - اِک سرابِ سیمیا میں رہ گئے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: اِک سرابِ سیمیا میں رہ گئے

    2gvsho3 - اِک سرابِ سیمیا میں رہ گئے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •