Results 1 to 2 of 2

Thread: فلک سے ہم کو عیشِ رفتہ کا کیا کیا تقاضا ہے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 فلک سے ہم کو عیشِ رفتہ کا کیا کیا تقاضا ہے


    فلک سے ہم کو عیشِ رفتہ کا کیا کیا تقاضا ہے !
    متاعِ بردہ کو، سمجھے ہوئے ہیں قرض، رہزن پر
    ہم، اور وہ بے سبب رنج آشنا دشمن، کہ رکھتا ہے
    شعاعِ مہر سے ، تہمت نگہ کی، چشمِ روزن پر
    فنا کو سونپ، گر مشتاق ہے ، اپنی حقیقت کا
    فروغِ طالعِ خاشاک ہے موقوف، گلخن پر

    2gvsho3 - فلک سے ہم کو عیشِ رفتہ کا کیا کیا تقاضا ہے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: فلک سے ہم کو عیشِ رفتہ کا کیا کیا تقاضا ہے

    2gvsho3 - فلک سے ہم کو عیشِ رفتہ کا کیا کیا تقاضا ہے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •