Results 1 to 2 of 2

Thread: یہ کون آج مِری آنکھ کے حصار میں ہے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 یہ کون آج مِری آنکھ کے حصار میں ہے

    یہ کون آج مِری آنکھ کے حصار میں ہے
    مجھے لگا کہ زمیں میرے اختیار میں ہے

    چراغِ رنگِ نوا، اب کہیں سے روشن ہو
    سکوتِ شامِ سفر، کب سے انتظار میں ہے

    کچھ اِس طرح ہے تری بزم میں یہ دل، جیسے
    چراغِ شامِ خزاں، جشنِ نو بہار میں ہے

    مِری حیات کے سارے سفر پہ بھاری ہے
    وہ ایک پل جو تری چشمِ اعتبار میں ہے

    جو اُٹھ رہا ہے کسی بے نشان صحرا میں
    نشانِ منزلِ ہستی اُسی غبار میں ہے

    ہماری کشتیٔ دل میں بھی اب نہیں وہ زور
    تمہارے حسن کا دریا بھی اب اُتار میں ہے

    کبھی ہے دُھوپ کبھی ابرِ خوش نما امجدؔ
    عجب طرح کا تلون مزاجِ یار میں ہے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    2gvsho3 - یہ کون آج مِری آنکھ کے حصار میں ہے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: یہ کون آج مِری آنکھ کے حصار میں ہے

    2gvsho3 - یہ کون آج مِری آنکھ کے حصار میں ہے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •