Results 1 to 2 of 2

Thread: نیا سفر ہے پرانے چراغ گل کر دو

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 نیا سفر ہے پرانے چراغ گل کر دو



    نیا سفر ہے پرانے چراغ گل کر دو



    فریبِ جنتِ فردا کے جال ٹوٹ گئے
    حیات اپنی امیدوں پہ شرمسار سی ہے
    چمن میں جشن و درودِ بہار ہو بھی چکا
    مگر نگاہِ گل و لالہ سوگوار سی ہے

    فضا میں گرم بگولوں کا رقص جاری ہے
    افق پہ خون کی مینا چھک رہی ہے ابھی
    کہاں کا مہرِ منور کہاں کی تنویریں
    کہ بام و در پہ سیاہی جھلک رہی ہے ابھی

    فضائیں سوچ رہی ہیں کہ ابنِ آدم نے
    خرد گنوا کے جنوں آزما کے کیا پایا
    وہی شکستِ تمنا وہی غمِ ایام!
    نگارِ زیست نے سب کچھ لٹا کے کیا پایا

    بھٹک کے رہ گئیں نظریں خلا کی وسعت میں
    حریمِ شاہدِ رعنا کا کچھ پتہ نہ ملا
    طویل راہ گزر ختم ہو گئی لیکن
    ہنوز اپنی مسافت کا منتہا نہ ملا

    سفر نصیب رفیقو! قدم بڑھائے چلو
    پرانے راہنما لوٹ کر نہ دیکھیں گے
    طلوعِ صبح سے تاروں کی موت ہوتی ہے
    شبوں کے راج دلارے ادھر نہ دیکھیں گے

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


    2gvsho3 - نیا سفر ہے پرانے چراغ گل کر دو

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: نیا سفر ہے پرانے چراغ گل کر دو

    2gvsho3 - نیا سفر ہے پرانے چراغ گل کر دو

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •