Results 1 to 2 of 2

Thread: نہ آسماں سے نہ دُشمن کے زور و زَر سے ہُوا

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 نہ آسماں سے نہ دُشمن کے زور و زَر سے ہُوا

    نہ آسماں سے نہ دُشمن کے زور و زَر سے ہُوا
    یہ معجزہ تو مِرے دَستِ بے ہنر سے ہُوا

    قدم اُٹھا ہے تو پاؤں تلے زمیں ہی نہیں
    سفر کا رنج ہمیں خواہشِ سفر سے ہوا

    میں بھیگ بھیگ گیا آرزو کی بارش میں
    وہ عکس عکس میں تقسیم چشمِ تر سے ہوا

    سیاہی شب کی نہ چہروں پہ آ گئی ہو کہیں
    سحر کا خوف ہمیں آئینوں کے ڈر سے ہوا

    کوئی چلے تو زمیں ساتھ ساتھ چلتی ہے
    یہ راز ہم پہ عیاں گردِ رہگزر سے ہوا

    ترے بدن کی مہک ہی نہ تھی تو کیا رُکتے
    گزر ہمارا کئی بار یوں تو گھر سے ہوا

    کہاں پہ سُوئے تھے امجدؔ کہاں کھُلیں آنکھیں
    گماں قفس کا ہمیں اپنے بام و دَر سے ہوا
    ۔۔۔۔۔۔



    2gvsho3 - نہ آسماں سے نہ دُشمن کے زور و زَر سے  ہُوا

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: نہ آسماں سے نہ دُشمن کے زور و زَر سے ہُوا

    2gvsho3 - نہ آسماں سے نہ دُشمن کے زور و زَر سے  ہُوا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •