Results 1 to 2 of 2

Thread: مقتل میں بھی اہل جنوں ہیں کیسے غزل خواں، دیکھو تو

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 مقتل میں بھی اہل جنوں ہیں کیسے غزل خواں، دیکھو تو

    مقتل میں بھی اہل جنوں ہیں کیسے غزل خواں، دیکھو تو!
    ہم پہ پتھر پھینکنے والو، اپنے گریباں، دیکھو تو!

    ہم بھی اُڑائیں خاکِ بیاباں، دَشت سے تم گزرو تو سہی
    ہم بھی دکھائیں چاکِ گریباں، لیکن جاناں، دیکھو تو

    اے تعبیریں کرنے والو، ہستی مانا خواب سہی
    اس کی رات میں جاگو تو، یہ خوابِ پریشاں دیکھو تو!

    آج ستارے گم صُم ہیں کیوں، چاند ہے کیوں سَودائی سا
    آئینے سے بات کرو، اِس بھید کا عنواں دیکھو تو!

    کِس کے حُسن کی بستی ہے یہ! کس کے رُوپ کا میلہ ہے!
    آنکھ اُٹھا اے حُسنِ زلیخا، یوسفِ کنعاں، دیکھو تو!

    جو بھی علاجِ درد کرو، میں حاضر ہوں، منظور مجھے
    لیکن اِک شب امجدؔ جی، وہ چہرۂ تاباں، دیکھو تو!
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


    2gvsho3 - مقتل میں بھی اہل جنوں ہیں کیسے غزل خواں، دیکھو تو

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: مقتل میں بھی اہل جنوں ہیں کیسے غزل خواں، دیکھو تو

    2gvsho3 - مقتل میں بھی اہل جنوں ہیں کیسے غزل خواں، دیکھو تو

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •