Results 1 to 2 of 2

Thread: خدا بھی اور سمندر میں ناخدا بھی ہے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 خدا بھی اور سمندر میں ناخدا بھی ہے

    خدا بھی اور سمندر میں ناخدا بھی ہے
    ستم تو یہ ہے کہ کشتی کو ڈوبنا بھی ہے

    کڑکتی رعد بھی، بارش بھی ہے، ہوا بھی ہے
    شجر کی شاخ پہ چھوٹا سا گھونسلا بھی ہے

    ہزار بار چھپی لو دیئے کی آندھی سے
    ہوا سے پوچھ، دِیا آج تک بُجھا بھی ہے

    ہے آفتاب تو جُگنو بھی ہے ذرا سا کہیں
    جہاں ہے دن کا وہاں شب کا آسرا بھی ہے

    یہ امتزاجِ تضادات ہی تو دنیا ہے
    اگر جفا ہے زمانے میں تو وفا بھی ہے

    تعلقات میں یہ اُونچ نیچ رہتی ہے
    کبھی خوشی ہے اُسے تو کبھی گِلہ بھی ہے

    ہوا جلی نہ دِیا ہی بُجھا ہے آج تلک
    عدیم ازل سے ہوا بھی ہے اور دِیا بھی ہے

    2gvsho3 - خدا بھی اور سمندر میں ناخدا بھی ہے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: خدا بھی اور سمندر میں ناخدا بھی ہے

    2gvsho3 - خدا بھی اور سمندر میں ناخدا بھی ہے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •