Results 1 to 2 of 2

Thread: سناتا ہے کوئی بھولی کہانی

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 سناتا ہے کوئی بھولی کہانی

    سناتا ہے کوئی بھولی کہانی
    مہکتے میٹھے دریاوں کا پانی
    یہاں جنگل تھے آبادی سے پہلے
    سنا ہے میں نے لوگوں+کی زبانی
    یہاں اک شہر تھا شہرِ نگاراں
    نہ چھوڑی وقت نے اس کی نشانی
    میں وہ دل ہوں دبستانِ الم کا
    جسے روئے گی صدیوں شادمانی
    تصور نے اُسے دیکھا ہے اکثر
    خرد کہتی ہے جس کو لا مکانی
    خیالوں ہی میں+اکثر بیٹھے بیٹھے
    بسا لیتا ہوں اک دنیا سہانی
    ہجومِ نشّۂ فکرِ سخن میں
    بدل جاتے ہیں لفظوں کے معانی
    بتا اے ظلمتِ صحرائے امکاں
    کہاں ہوگا مرے خوابوں+کا ثانی
    اندھیری شام کے پردوں میں+ چھپ کر
    کسے روتی ہے چشموں کی روانی
    کرن پریاں اترتی ہیں کہاں سے
    کہاں جاتے ہیں رستے کہکشانی
    پہاڑوں سے چلی پھر کوئی آندھی
    اُڑے جائے ہیں اوراقِ خزانی
    نئی دنیا کے ہنگاموں میں+ ناصرؔ
    دبی جاتی ہیں آوازیں پرانی


    2gvsho3 - سناتا ہے کوئی بھولی کہانی

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: سناتا ہے کوئی بھولی کہانی

    2gvsho3 - سناتا ہے کوئی بھولی کہانی

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •