Results 1 to 2 of 2

Thread: رہ نوردِ بیابانِ غم صبر کر صبر کر

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,222
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    New5555 رہ نوردِ بیابانِ غم صبر کر صبر کر

    رہ نوردِ بیابانِ غم صبر کر صبر کر
    کارواں پھر ملیں گے بہم صبر کر صبر کر
    بے نشاں ہے سفر رات ساری پڑی ہے مگر
    آرہی ہے صدا دم بدم صبر کر صبر کر
    تیری فریاد گونجے گی دھرتی سے آکاش تک
    کوئی دن اور سہہ لے ستم صبر کر صبر کر
    تیرے قدموں سے جاگیں گے اُجڑے دلوں کے ختن
    پا شکستہ غزالِ حرم صبر کر صبر کر
    شہر اجڑے تو کیا ہے کشادہ زمینِ خدا
    اک نیا گھر بنائیں گے ہم صبر کر صبر کر
    یہ محلاّتِ شاہی تباہی کے ہیں منتظر
    گرنے والے ہیں ان کے علم صبر کر صبر
    دف بجائیں گے برگ و شجر صف بہ صف ہر طرف
    خشک مٹی سے پھوٹے گا نم صبر کر صبر کر
    لہلہا ئیں گی پھر کھیتیاں کارواں کارواں
    کھل کے برسے گا ابر کرم صبر کر صبر کر
    کیوں پٹکتا ہے سر سنگ سے جی جلا ڈھنگ سے
    دل ہی بن جائے گا خود صنم صبر کر صبر کر
    پہلے کھل جائے دل کا کنول پھر لکھیں گے غزل
    کوئی دم اے صریر قلم صبر کر صبر کر
    درد کے تار ملنے تو دے ہونٹ ہلنے تو دے
    ساری باتیں کریں گے رقم صبر کر صبر کر
    دیکھ ناصرؔ زمانے میں کوئی کسی کا نہیں
    بھول جا اُس کے قول و قسم صبر کر صبر کر


    2gvsho3 - رہ نوردِ بیابانِ غم صبر کر صبر کر

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,222
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    Default Re: رہ نوردِ بیابانِ غم صبر کر صبر کر

    2gvsho3 - رہ نوردِ بیابانِ غم صبر کر صبر کر

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •