Results 1 to 2 of 2

Thread: قلم جب درہم و دینار میں تولے گئے تھے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 قلم جب درہم و دینار میں تولے گئے تھے

    قلم جب درہم و دینار میں تولے گئے تھے
    کہاں تک دل کی چنگاری ترے شعلے گئے تھے

    فصیل شہر لب بستہ، گواہی دے کچھ لوگ
    دہان ِ حلقہ زنجیر سے بولے گئے تھے

    تمام آزاد آوازوں کے چہرے گرد ہو جائیں گے
    فضاؤں میں کچھ ایسے زہر بھی گھولے گئے تھے

    فساد ِ خوں سے سارا بدن تھا زخم زخم
    سو نشتر سے نہیں شمشیر سے کھولے گئے تھے

    وہ خاک پاک ہم اہل محبت کو ہے اکسیر
    سر مقتل جہاں نیزوں پہ سر تولے گئے تھے
    ٭٭٭

    2gvsho3 - قلم جب درہم و دینار میں تولے گئے تھے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: قلم جب درہم و دینار میں تولے گئے تھے

    2gvsho3 - قلم جب درہم و دینار میں تولے گئے تھے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •