Results 1 to 2 of 2

Thread: عشق، تاثیر سے نومید نہیں

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,305
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5862
    Rep Power
    214774

    New5555 عشق، تاثیر سے نومید نہیں


    عشق، تاثیر سے نومید نہیں
    جاں سپاری، شجرِ بید نہیں
    رازِ معشوق نہ رسوا ہو جائے
    ورنہ مر جانے میں کچھ بھید نہیں
    ہے تجلی تری، سامانِ وجود
    ذرّہ، بے پرتوِ خورشید نہیں
    گردشِ رنگِ طرب سے ڈرئیے
    غمِ محرومئ جاوید نہیں !
    سلطنت دست بَدَست آئے ہے
    جامِ مے ، خاتمِ جمشید نہیں
    کہتے ہیں "جیتی ہے امید پہ خلق"
    ہم کو جینے کی بھی امید نہیں
    مے کشی کو نہ سمجھ بے حاصل
    بادہ، غالبؔ! عرقِ بید نہیں


    2gvsho3 - عشق، تاثیر سے نومید نہیں

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,305
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5862
    Rep Power
    214774

    Default Re: عشق، تاثیر سے نومید نہیں

    2gvsho3 - عشق، تاثیر سے نومید نہیں

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •