Results 1 to 2 of 2

Thread: نالہ جُز حسنِ طلب، اے ستم ایجاد! نہیں

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 نالہ جُز حسنِ طلب، اے ستم ایجاد! نہیں


    نالہ جُز حسنِ طلب، اے ستم ایجاد! نہیں
    ہے تقاضائے جفا، شکوۂ بیداد نہیں
    عشق و مزدوریِ عشرت گہِ خسرو، کیا خُوب!
    ہم کو تسلیم، نکو نامیِ فرہاد، نہیں !
    کم نہیں وہ بھی خرابی میں ، پہ وسعت معلوم
    دشت میں ہے مجھے وہ عیش کہ گھر یاد نہیں
    اہلِ بینش کو، ہے طوفانِ حوادث، مکتب
    لطمۂ موج، کم از سیلئِ استاد، نہیں
    کرتے کس منہ سے ہو غربت کی شکایت، غالبؔ!
    تم کو دل تنگیِ رندانِ وطن یاد نہیں ؟


    2gvsho3 - نالہ جُز حسنِ طلب، اے ستم ایجاد! نہیں

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: نالہ جُز حسنِ طلب، اے ستم ایجاد! نہیں

    2gvsho3 - نالہ جُز حسنِ طلب، اے ستم ایجاد! نہیں

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •