Results 1 to 2 of 2

Thread: پیام عشق

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,240
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    candel پیام عشق

    پیام عشق


    سن اے طلب گار درد پہلو! میں ناز ہوں ، تو نیاز ہو جا
    میں غزنوی سومنات دل کا ، تو سراپا ایاز ہو جا
    نہیں ہے وابستہ زیر گردوں کمال شان سکندری سے
    تمام ساماں ہے تیرے سینے میں ، تو بھی آئینہ ساز ہو جا
    غرض ہے پیکار زندگی سے کمال پائے ہلال تیرا
    جہاں کا فرض قدیم ہے تو ، ادا مثال نماز ہو جا
    نہ ہو قناعت شعار گلچیں! اسی سے قائم ہے شان تیری
    وفور گل ہے اگر چمن میں تو اور دامن دراز ہو جا
    گئے وہ ایام ، اب زمانہ نہیں ہے صحرا نوردیوں کا
    جہاں میں مانند شمع سوزاں میان محفل گداز ہو جا
    وجود افراد کا مجازی ہے ، ہستی قوم ہے حقیقی
    فدا ہو ملت پہ یعنی آتش زن طلسم مجاز ہو جا
    یہ ہند کے فرقہ ساز اقبال آزری کر رہے ہیں گویا
    بچا کے دامن بتوں سے اپنا غبار راہ حجاز ہو جا



    2gvsho3 - پیام عشق

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,240
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    Default Re: پیام عشق

    2gvsho3 - پیام عشق

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •