Results 1 to 2 of 2

Thread: دھوپ نکلی دن سہانےہو گئے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 دھوپ نکلی دن سہانےہو گئے


    دھوپ نکلی دن سہانےہو گئے
    چاند کے سب رنگ پھیکے ہو گئے
    کیا تماشا ہے کہ بے ایامِ گل
    ٹہنیوں کے ہاتھ پیلے ہو گئے
    اس قدر رویا ہوں+ تیری یاد میں
    آئینے آنکھوں کے دھندلے ہو گئے
    ہم بھلا چپ رہنے والے تھے کہیں
    ہاں مگر حالات ایسے ہو گئے
    اب تو خوش ہو جائیں اربابِ ہوس
    جیسے وہ تھے ہم بھی ویسے ہو گئے
    حسن اب ہنگامہ آرا ہو تو ہو
    عشق کے دعوے تو جھوٹے ہو گئے
    اے سکوتِ شامِ غم یہ کیا ہوا
    کیا وہ سب بیمار اچھے ہو گئے
    دل کو تیرے غم نے پھر آواز دی
    کب کے بچھڑے پھر اکھٹے ہو گئے
    آو ناصرؔ ہم بھی اپنے گھر چلیں
    بند اس گھر کے دریچے ہو گئے



    2gvsho3 - دھوپ نکلی دن سہانےہو گئے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: دھوپ نکلی دن سہانےہو گئے

    2gvsho3 - دھوپ نکلی دن سہانےہو گئے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •