Results 1 to 2 of 2

Thread: پیغام بر

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,240
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    New5555 پیغام بر


    پیغام بر

    میں کوئی کرنوں کا سوداگر نہیں
    اپنے اپنے دکھ کی تاریکی لیے
    تم آ گئے کیوں میرے پاس
    غم کے انباروں کو کاندھے پر دھرے
    بوجھل صلیبوں کی طرح
    آشفتہ مو افسردہ رو خونیں لباس
    ہونٹ محرومِ تکلم پر سراپا التماس
    اس تمنا پر کہ تم کو مل سکے
    غم کے انباروں کے بدلے
    مسکراہٹ کی کرن---جینے کی آس
    میں مگر کرنوں کا سوداگر نہیں
    میں نہیں جوہرِ شناس
    صورتِ انبوہِ دریوزہ گراں
    سب کے دل ہیں قہقہوں سے چُور
    لیکن آنکھ سے آنسو رواں
    سب کے سینوں میں امیدوں کے چراغ
    اور چہروں پر شکستوں کا دھواں
    زندگی سب سے گریزاں
    سوئے مقتل سب رواں
    سب نحیف و ناتواں
    سب کے سب اک دوسرے کے ہمسفر
    اِک دوسرے سے بدگماں
    سب کی آنکھوں میں خیالِ مرگ سے خوف و ہراس
    میری باتوں سے میری آواز سے
    تم نے یہ جانا کہ میں بھی
    لے کے آیا ہوں تمہارے واسطے وہ معجزے
    جن سے بھر جائیں گے پل بھر میں تمہارے
    اَن گنت صدیوں کے لا تعداد زخم
    دم بخود سانسوں کو ٹھہرائے ہوئے بے جان جسم
    منتظر ہیں قم باذنی کی صدائے سحر کے
    ایشیا پیغمبروں کی سر زمیں
    اور تم اس کے زبو ں قسمت مکیں....تیرہ جبیں
    من و سلویٰ کے لئے دامن کشا
    قحط خوردہ زار و بیمار و حزیں
    صرف تقدیر و توکل پر یقیں
    تم کو شیرینِ طلب کی چاہ لیکن بے ستونِ غم کی سل کو
    چیرے کا حوصلہ، یارا نہیں
    تم یدِ بیضا کے قائل، بازوئے فرہاد کی قوت سے بہرہ ور نہیں
    تم کہ ہو کہنہ گرفتہ....زندگی سے دُور
    مردہ ساحروں کی بے نشا ں قبرو ں کے سجادہ نشیں
    خاک داں کی اس گلِ تاریک کا
    میں بھی اک پیکر ہوں، پیکر گر نہیں
    میں کوئی کرنوں کا سوداگر نہیں
    ریت کے تپتے ہوئے ٹیلوں پہ استادہ ہو تم
    سایۂ ابرِ رواں کو دیکھتے رہنا تمہارا جزوِ دیں
    سات قلزم موجزن چاروں طرف
    اور تمہارے بخت میں شبنم نہیں

    اپنے اپنے دکھ کی بوجھل گٹھریوں کو
    تم نے کھولا ہے کبھی؟
    اپنے ہم جنسوں کے سینوں کو ٹٹولا ہے کبھی؟
    سب کی روحیں گرسنہ....سب کی متاعِ درد میں
    دوسروں کا خون پینے ہوس
    ایک کا دکھ دوسرو ں سے کم نہیں
    ایک کا دکھ تشنگی، بیچارگی
    دوسروں کا دکھ مگر افراطِ مے....دیوانگی
    پیاس اور نشے کا دکھ
    اپنے انباروں سے مل کر چھانٹ لو
    پیاس اور نشے کا دکھ اک دوسرے میں بانٹ لو
    پھر تمہاری زندگی شاید نہ ہو
    شاکیِ عرشِ بریں و رحمت اللعالمین
    میں کوئی کرنوں کا سوداگر نہیں
    ٭٭٭



    2gvsho3 - پیغام بر

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,240
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    Default Re: پیغام بر

    2gvsho3 - پیغام بر

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •