Results 1 to 2 of 2

Thread: ستم کی رات کو جب دن بنانا پڑتا ہے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 ستم کی رات کو جب دن بنانا پڑتا ہے


    ستم کی رات کو جب دن بنانا پڑتا ہے
    چراغِ جاں سرِ مقتل جلانا پڑ تا ہے

    اُٹھانا پڑتا ہے پلکوں سے رَت جگوں کا خُمار
    پھر اس خُمار سے خود کو بچانا پڑ تا ہے

    کسی کی نیند کسی سے بدلنی پڑ تی ہے
    کسی کا خواب کسی کو دِکھانا پڑ تا ہے

    کسی سے پوچھنا پڑتا ہے اپنے گھر کا پتا
    کسی کو شہر کا نقشہ دِکھانا پڑ تا ہے

    بگڑ رہا ہے کچھ ایسا توازنِ ہستی
    کسی کا بوجھ کسی کو اُٹھا نا پڑ تا ہے

    کوئی کسی کے کہے سے کبھی رُکا ہی نہیں
    وہاں رُکا ہے جہاں آب و دانہ پڑ تا ہے

    وہ ایک پَل کی مُسافت پہ تھا مگر مجھ سے
    نہ جانے کس نے کہا تھا زمانہ پڑتا ہے

    عجیب طرح سے اُس نے بنائی ہے دُنیا
    کہیں کہیں تو یہاں دِل لگا نا پڑ تا ہے
    ٭٭٭


    2gvsho3 - ستم کی رات کو جب دن بنانا پڑتا ہے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: ستم کی رات کو جب دن بنانا پڑتا ہے

    2gvsho3 - ستم کی رات کو جب دن بنانا پڑتا ہے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •