Results 1 to 2 of 2

Thread: جو گفتنی نہیں وہ بات بھی سنادوں گا

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    New5555 جو گفتنی نہیں وہ بات بھی سنادوں گا

    جو گفتنی نہیں وہ بات بھی سنادوں گا
    تو ایک بار تو مل، سب گلے مٹادوں گا
    مجال کیا، کوئی مجھ سے تجھے جدا کر دے
    جہاں بھی جائے گا تو میں تجھے صدا دوں گا
    تری گلی میں بہت دیر سے کھڑا ہوں مگر
    کسی نے پوچھ لیا تو جواب کیا دوں گا
    مری خموش نگاہوں کو چشم کم سے نہ دیکھ
    میں رو پڑا تو دلوں کے طبق ہلا دوں گا
    یونہی اداس رہا میں تو دیکھنا اک دن
    تمام شہر میں تنہائیاں بچھا دوں گا
    بہ پاس صحبتِ دیرینہ کوئی بات ہی کر
    نظر ملا تو سہی میں تجھے دعا دوں گا
    بلاؤں گا نہ ملوں گا نہ خط لکھوں گا تجھے
    تری خوشی کے لیے خود کو یہ سزا دوں گا
    وہ درد ہی نہ رہا ورنہ اے متاعِ حیات
    مجھے گماں بھی نہ تھا میں تجھے بھلا دوں گا
    ابھی تو رات ہے کچھ دیر سو ہی لے ناصر
    کوئی بلائے گا تو میں تجھے جگا دوں گا


    2gvsho3 - جو گفتنی نہیں وہ بات بھی سنادوں گا

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    25,270
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5876
    Rep Power
    214780

    Default Re: جو گفتنی نہیں وہ بات بھی سنادوں گا

    2gvsho3 - جو گفتنی نہیں وہ بات بھی سنادوں گا

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •